شیخ رشید کاوزیرداخلہ بنتے ہی بڑاکھڑاک،پاکستان میں غیرقانونی رہائش پذیرلاکھوں افغان شہریوں کو تاریخی جھٹکا ، بڑی خبرآگئی

راولپنڈی(ویب ڈیسک) وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کا کہنا ہے کہ ہم نے 2 لاکھ غیر قانونی رہائش پذیر افغانوں کے کارڈ بلاک کیے ہیں۔راولپنڈی میں نادرا دفتر کے دورے کے موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ ہمارے پاس افغان مہاجرین کا مکمل ڈیٹا موجود ہے، پاکستان میں رجسٹرڈ 15لاکھ افغان مہاجرین کو رہنے کی اجازت ہے، ملک

میں 8 لاکھ افغان مہاجرین غیر قانونی مقیم ہیں، 2 لاکھ غیر قانونی رہائش پذیر افغانوں کے کارڈ بلاک کیے ہیں۔ ہم نے چین اور افغانستان کا مینوئل ویزا ختم کردیا ۔ آن لائن ویزے سے کرپشن کا خاتمہ ہوا ہے۔ ایک دن میں ویزے کے لئے 2 لاکھ آن لائن درخواستیں آئی ہیں۔نواز شریف کے پاسپورٹ سے متعلق شیخ رشید نے کہا کہ نواز شریف کے پاسپورٹ کی معیاد 16 فروری کو ختم ہورہی ہے، جس کے بعد اس کی تجدید نہیں کی جائے گی۔ وزیراعظم عمران خان استعفیٰ نہیں دیں گے۔ وہ حکومت چھوڑ سکتے ہیں لیکن این آراو کے آگے سرینڈر نہیں کریں گے۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم والے عوام کو دھوکہ دے رہے ہیں، پی ڈی ایم نے شکست تسلیم کرلی، پی ڈی ایم نے فیصلہ کرلیا یے الیکشن میں حصہ لے گی، پیپلز پارٹی جیت گئی اور پی ڈی ایم ہار گئی، پیپلز پارٹی نے ان کے گھٹنے ٹکوا دیئے، یہ استعفے نہیں دیں گے لیکن لانگ مارچ ضرور کریں گے،جس دن اپوزیشن لانگ مارچ کی تاریخ بتائے گی

ہم اسی دن اپنا آئینی اور قانونی حق جتائیں گے۔ یہ اچھی بات ہے کہ انہوں نے انتخابات کی بات کی کیون کہ میدان خالی نہیں ہونا چاہیے۔پیپلز پارٹی سے متعلق شیخ رشید نے کہا کہ بلاول بھٹو زرداری کے ہاتھ کی گھڑی، چھڑی اور فیصلوں کا اختیار آصف زرداری کے پاس ہے، جو سیاست دان ڈائیلاگ کا راستہ کھلا نہیں رکھتا وہ کم عقل ہے، آصف زرداری اپنے لیے راستے بنانے جا رہے ہیں جب کہ (ن) لیگ نے اپنے لیے راستے بند کرلیے۔وزیر داخلہ نے کہا کہ فوج سمیت قومی اداروں کے خلاف جو بات کرے گا اس کے خلاف 72 گھنٹوں میں مقدمہ ہوگا، مفتی کفایت اللہ کا کیس کے پی کو بجھوا دیا ہے۔مولانا فضل الرحمان سے متعلق شیخ رشید نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان عالم دین ہیں، انہیں اسلام اوراسلام آباد کا احترام ملحوظ خاطر رکھنا چاہیے، ان کے ستارے گردش میں ہیں، ان کی سیاست الٹ گئی، ان کی ہوائیاں اڑی ہوئی ہیں، اسلام آباد پر قبضے کا خواب چھوڑ دینا چاہیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں