کوہاٹ کا آفریدی لاہور میں بے یار و مددگار ۔۔۔۔۔ تحریک انصاف کے سرگرم کارکن کے ساتھ کیا کچھ ہو گیا ؟ انصاف سرکار کا پول کھول دینے والی خبر

لاہور(ویب ڈیسک) چند روز پہلے ایک خبر آئی تھی جسکے مطابق محکمہ انسداد بدعنوانی نے ایل ڈی اے اور پولیس کے ہمراہ سمسانی روڈ پر کارروائی کرتے ہوئے ن لیگ کے رہنما افضل کھوکھر،سیف الملوک کھوکھر اور انکے رشتہ داروں کی 300سے زائد دکانیں سر بمہر کر دیں۔رہائشی علاقوں کو غیر قانونی طور پر کمرشل علاقوں

میں بدلا گیا تھا، اب تازہ ترین خبر یہ آئی ہے کہ ایسا کچھ نہیں ہوا ، جس مارکیٹ میں دکانیں سیل کی گئیں وہاں کھوکھر برادران کی صرف 8 دکانیں ہیں جو بدستور کھلی ہیں ، لیکن غریب اور بے بس لوگوں کی دکانوں کو سیل کر دیا گیا ،مارکیٹ کے صدر رحیم آفریدی نے میڈیا سے رابطہ کرکے بتایا کہ میں تحریک انصاف کا سرگرم کارکن ہوں اور ہم یہاں بھاری کرائے دے کراپنے بچوں کا رزق کمانے کے لیے بیٹھے ہیں ، مگر انتظامیہ اور دیگر اداروں نے ملکر ہم سے رزق چھین لیا ہے ، سینکڑوں مزدوروں اور ورکرز کے چولہے ٹھنڈے ہو چکے ہیں اور ہم کئی روز سے سڑک پر بیٹھے احتجاج کررہے ہیں ، مگر کسی نے ہمارے احتجاج کا نوٹس نہ لیا ، جس افسر کے پاس جائیں وہ آئیں بائیں شائیں کرکے ہماری مدد کرنے سے انکار کر دیتا ہے ، رحیم آفریدی اور اس مارکیٹ کے سینکڑوں دکانداروں و ملازمین ، مزدوروں ، کاریگروں نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار سے مدد کی اپیل کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ انکی دکانوں کو ڈی سیل کیا جائے ورنہ وہ انتہائی قدم اٹھانے پر مجبور ہو جائینگے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں