پاکستان کی نامور خاتون گلوکارہ نے 22 لاکھ روپے کا ٹیکس جمع کروا دیا ، گلوکاری کے علاوہ انکے اور کیا اور کہاں کہاں کاروبار نکلے ؟ جانیے

لاہور(ویب ڈیسک)پشتو کی ایک خاتون گلو کارہ نے 22لاکھ روپے کا ٹیکس جمع کر دیا ہے جبکہ مزید12گلو کاروں کو پچاس لاکھ روپے تک ٹیکس جمع کرنے کے نوٹسز جاری کردیئے ہیں پشتو کے خوبرو گلو کارہ کو ایف بی آر کی جانب سے بائیس لاکھ روپے ٹیکس جمع کرنے کا نوٹس جاری کیا گیا تھا

پاکستان ، افغانستان ، سعودی عرب ، دبئی سمیت مختلف بیرون ممالک میں شو کرنے اور لاکھوں روپے کے اثاثہ جات کی موجودگی میں خاتون گلو کارہ کو نوٹس جاری کیاگیا تھا جس پر خاتون گلو کارہ نے چیئر مین ایف بی آر کو بھی ہمدردانہ اپیل کی تھی تاہم ایف بی آرکی جانب سے درخواست مسترد کرنے کے بعد خاتون گلو کارہ کی جانب سے ٹیکس جمع کرایا گیا جبکہ مزید بارہ پشتو ، اردو، ہندکو کے خواتین اور مرد ادکاروں کو نوٹسز جاری کر دیئے ہیں ان گلوکاروں کے اثاثہ جات لاکھوں روپے میں بتائے گئے ہیں تاہم انکم ٹیکس کی ادائیگی نہیں کر رہی ہے ۔ ایف بی آر ذرائع نے بتایا ہے کہ انکم ٹیکس کے ذمرے میں لانے کے لئے ایف بی آر نے مزیدکو ششیں تیز کی ہے ۔دوسری جانب ایک اور خبر کے مطابق ایک اور شوبز سٹار ایف بی آر کے شکنجے میں آگیا، ایف بی آر نے شہرہ آفاق گلوکار عاطف اسلم پر 5کروڑ 80لاکھ روپے انکم ٹیکس عائد کردیا۔تفصیلات کے مطابق ایف بی آر نے گلوکار عاطف اسلم کا سال 2018کا انکم ٹیکس آڈٹ کرکے ٹیکس عائدکیا گلوکار عاطف اسلم نے دوبئی میں واقع اپنے فلیٹس گوشواروں میں ظاہر نہیں کئے تھے ایف بی آر نے عاطف اسلم کے بنک اکاؤنٹس اور اثاثہ جات کی تفصیلات حاصل کررکھی تھی ایف بی آر نے گلوکار عاطف اسلم پر ٹیکس عائد کرکے نوٹس جاری کردیا۔یاد رہے اس سے قبل پاکستانی اداکار اور چاکلیٹی ہیرو فواد خان بھی ایف بی آر کے ریڈار پر آگئے تھے، فواد خان نے بیرون ملک کی آمدن ایک کروڑ 17 لاکھ ڈالر ظاہر کی، ایف بی آر نے چھان بین شروع کرکے ایف آئی ایسے فلمسٹار کی پانچ سالہ ٹریول ہسٹری مانگ لی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں