عمران حکومت کا ایک اور کارنامہ ۔۔۔!!! محکمہ ایکسائز نے بغیر ٹوکن ٹیکس کی ادائیگی کے لاکھوں گاڑیاں سسٹم میں بلاک کر دیں

لاہور(ویب ڈیسک) محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن نے ٹوکن ٹیکس نادہندہ 4 لاکھ سے زائد گاڑیاں سسٹم میں بلاک کردیں، بلاک شدہ گاڑیاں ٹوکن ٹیکس کی ادائیگی تک کسی کے نام ٹرانسفر اور فروخت بھی نہیں ہوسکیں گی۔تفصیلات کے مطابق محکمہایکسائز نے رواں مالی سال کے پہلے 4 ماہ کے دوران ٹیکس نادہندگان کی 4 لاکھ سے زائد

گاڑیاں سسٹم میں بلاک کردی ہیں۔ ٹوکن ٹیکس کی ادائیگی تک کوئی ٹرانزیکشن نہیں ہوگی اور گاڑی کا آن لائن سٹیٹس بھی نہیں دیکھا جاسکے گا۔ڈائریکٹر ریجن سی رانا قمرالحسن کا کہنا ہے کہ 4 ماہ کا رعایتی پریڈ ختم ہونے کےباوجود شہریوں کی جانب سے ٹیکس ادا نہیں کیا گیا۔ بارہاں آگاہی دینے کے باوجود شہری ٹوکن ٹیکس ادزا نہیں کررہے، رواں مالی سال کے پہلے 4 ماہ کے دوران ڈیڑھ ارب سے زائد کی ریکوری کی جاچکی ہے۔ یکم نومبر سے ٹوکن ٹیکس نادہندگان کے خلاف کریک ڈاؤن کا آغاز کیا جانا تھا۔شہریوں کو آخری وارننگ دیتے ہوئے کریک ڈاؤن 15 روز کے لئے موخر کیا گیا جس کے بعد بڑے ڈیفالٹرز کی گاڑیاں بند جبکہ ایک سال کے نادہندگان کی گاڑیوں کے کاغذات ضبط کرکے چالان کیے جائیں گے۔ گاڑیاں سسٹم میں بلاک کرنے کا مقصد شہریوں سے بروقت ادائیگی کرانا ہے۔ نادہندگان گاڑی مالکان کو ایس ایم ایس بھجوانے کا سلسلہ بھی شروع کردیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں