الیکشن ہارتے ہی میلانیا نے طلاق لینے کا فیصلہ کرلیا، ٹرمپ کی قریبی ساتھی کے دعوے نے تہلکہ مچا دیا

واشنگٹن(ویب ڈیسک) امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ ایک طرف انتخابات ہارنے کے غم سے دوچار ہیں اور اس پر ان کی حکومت کے ایک سابق عہدیدار نے ایسا دعویٰ کر دیا ہے کہ صدر ٹرمپ کی پریشانی دوچند ہو جائے گی۔ میل آن لائن کے مطابق ٹرمپ انتظامیہ میں اہم عہدے پر فائز رہنے والی سٹیفنی ووک آف نے دعویٰ کیا ہے

کہ صدر ٹرمپ کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ ان سے طلاق لینے جا رہی ہیں اور وہ اس کام کے لیے صدر ٹرمپ کے وائٹ ہائوس سے رخصت ہونے کا انتظار کر رہی ہیں۔سٹیفنی نے کہا ہے کہ میلانیا ٹرمپ ایک ایک منٹ گن گن کر گزار رہی ہیں کہ صدر ٹرمپ کب وائٹ ہائوس سے نکلیں اور وہ ان سے طلاق لے۔ رپورٹ کے مطابق 2016ء میں جب ڈونلڈٹرمپ غیرمتوقع طور پر الیکشن جیت گئے تھے تو ان کی فتح پر میلانیا ٹرمپ پھوٹ پھوٹ کر رونے لگی تھیں۔ ان کی ایک دوست نے کہا تھا کہ میلانیا کو توقع ہی نہیں تھی کہ ٹرمپ الیکشن جیت جائیں گے۔ اس کے بعد میلانیا نے وائٹ ہائوس منتقل ہونے میں تامل کا مظاہرہ کیا اور 5ماہ بعد وائٹ ہائوس منتقل ہوئیں۔ سٹیفنی نے قبل ازیں یہ بھی دعویٰ کیا تھا کہ وائٹ ہائوس میں ڈونلڈ ٹرمپ اور میلانیا کے الگ الگ بیڈ رومز ہیں، وہ الگ رہتے ہیں اور ان کی شادی ایک سمجھوتے کے تحت چل رہی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں