یہ کام نہ کیا تو کسی طالب علم کو میڈیکل کالج میں داخلہ نہیں ملے گا۔۔۔پاکستان میڈیکل کمیشن نے بڑا اعلان کر دیا

لاہور(ویب ڈیسک) نئے قانون میں ایم ڈی کیٹ پورے پاکستان میں ایک جیسا لاگو کر دیا گیا،پاکستان میڈیکل کمیشن کے نائب صدرعلی رضا نے کہاہے کہ ایم ڈی کیٹ ٹیسٹ کے بغیر کسی طالب عالم کو کہیں داخلہ نہیں ملے گا ،نمز کے انٹری ٹیسٹ کا پی ایم سی کے انٹری ٹیسٹ سے کوئی تعلق نہیں،

سندھ، بلوچستان اور خیبرپختونخوا سے شکایات سامنے آنے کی وجہ سے ایسا کیا گیا۔ پاکستان میڈیکل کمیشن کی پہلی پریس کانفرنس میں نائب صدر علی رضا نے پریس کانفرنس میں بتایا کہ نمز کے انٹری ٹیسٹ کا پی ایم سی کے انٹری ٹیسٹ سے کوئی تعلق نہیں۔ جب تک کوئی طالبعلم ایم ڈی کیٹ پاس نہیں کرے گا کسی بھی کالج میں داخلہ نہیں لے سکے گا۔نائب صدر نے بتایاکہ 31 دسمبر تک داخلوں کو مکمل کرنے کے لیے خط لکھ دیا گیا ہے نجی کالجز کو اپنے داخلے خود کرنے کی اجازت ہوگی نمز کے پاس سب سے بڑا سوالات کا بینک ہے نمز بس پیپر پرنٹ کرے گا سیل کرے گا اور ہمارے حوالے کر دے گا،، یہ تمام ذمہ داری پی ایم سی کی ہی ہے ۔علی رضا نے کہا کہ داخلوں کا نظام آٹومیٹڈ ہے تمام کالج میں سینٹرل پورٹل کے زرہعے ہی اپلائی کیا جاسکے گا۔یکم جنوری کو تمام کالجز کی میرٹ لسٹ جاری کر دی جائے،اگر بچہ ایک سے زائد میڈیکل کالجز کی میرٹ لسٹ میں آگیا تو اس کو انتخاب کی اجازت ہوگی

اپنا تبصرہ بھیجیں