عمران خان کی ریحام خان کے ساتھ شادی تو 2014 میں ہی ہوگئی تھی پھر اسے چھپا کر کیوں رکھا گیا ؟ ایک اور حیران کن انکشاف

لاہور(ویب ڈیسک) عمران خان کی زندگی میں اکتوبر بہت اہم ہے کہ ان کی پارٹی کا مینار پاکستان میدان لاہور میں وہ یادگار جلسہ 30 اکتوبر 2011کو ہی ہوا جس سے ملنے والی قوت نے بالآخر انہیں ایوان وزیراعظم میں پہنچایا۔عمران خان پیدا بھی 5 اکتوبر 1952 کو ہوئے تھے۔ یکم اکتوبر 2012کو طالبان نے

حکیم اللہ محسود کی صدارت میں کمانڈرز کے اجلاس کے بعد عمران خان کی 6 اکتوبر کو ہونے والی ریلی کیلئے حفاظت فراہم کرنے کی پیشکش کی تھی ۔اس ریلی کے نتیجے میں عمران خان کو خیبر پختونخوا اور بلوچستان سے کافی حمایت حاصل ہوئی جس کے ثمرات بعد میں ملتے رہے، پرویز مشرف کے وردی اتارے بغیر 6 اکتوبر2007کو ہونے والے صدارتی الیکشن لڑنے پر احتجاج کیلئے 2 اکتوبر 2007کو عمران خان نے بھی 85 ارکان پارلیمنٹ کے ساتھ استعفیٰ دے دیا، 11 اکتوبر 2019کو عمران خان نے ترک صدر اردوان سے کہا کہ پاکستان ٹیررزم کے حوالے سے ترکی کی تشویش کو پوری طرح سمجھتا ہے۔اس بیان کو ترکی اور مشرق وسطیٰ میں بہت اہمیت دی گئی، جنوری 2015 میں اعلان کیا گیا کہ عمران خان نے پاکستانی نژاد برطانوی صحافی ریحام خان سے اپنی رہائش گاہ پر نکاح کرلیا ہے لیکن ریحام خان نے بعد میں اپنی کتاب میں لکھا کہ ان کی شادی دراصل اکتوبر 2014میں ہوگئی تھی لیکن اعلان جنوری 2015میں کیا گیا۔دونوں نے علیحدگی کا فیصلہ بھی اکتوبر ہی کی 22 تاریخ کو کیا، اب اکتوبر ہی میں ہی عمران خان کو اپوزیشن کا حقیقی چیلنج درپیش ہے۔۔۔