افیئرز کے سوا ہمارے ڈراموں میں ہے کیا ؟ صدر مملکت عارف علوی کی اہلیہ کا حیران کن بیان ۔۔۔۔ پاکستانی ڈراموں کی اصلیت قوم کے سامنے رکھ دی

لاہور(ویب ڈیسک)صدر مملکت عارف علوی کی اہلیہ خاتون اول ثمینہ علوی نے پاکستانی ڈراموں کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستانی ڈراموں میں ایک جیسے ہی غیر مہذب موضوعات دکھائے جانے پر افسوس ہے، ملکی ڈراموں میں غلط چیزوں کے علاوہ کچھ نہیں دکھایا جاتا۔ایک انٹرویو میں خاتون اول

نے اعتراف کیا کہ وہ ایک جیسے ہی ولگر موضوعات کی وجہ سے پاکستانی ڈرامے کم دیکھتی ہیں، کیوں کہ ان میں افیئرز اور غلط چیزوں کے علاوہ کچھ نہیں دکھایا جاتا۔خاتون اول نے انکشاف کیا کہ انہیں پاکستانی ڈرامے دیکھنے سے ڈپریشن ہوجاتا ہے، کیوں کہ ان میں کوئی بھی ،ڈھنگ کی چیز نہیں دکھائی جاتی۔اہلیہ صدر مملکت کے مطابق پاکستانی ڈراموں میں کوئی بھی تعمیری کام نہیں کیا جا رہا اور انہوں نے اس مسئلے پر کچھ ٹی وی شخصیات سے بات بھی کی، جنہوں نے انہیں بتایا کہ ولگر اور بولڈ موضوع پر بنے ڈراموں کی ہی ریٹنگ آتی ہے۔خاتون اول نے کہا کہ ڈراموں میں غلط چیزیں دکھانے کی وجہ سے ہی آج کل لڑکے اور لڑکیاں غلط کام کر رہے ہیں تاہم انہوں نے اس کی مزید وضاحت نہیں کی۔بیگم ثمینہ علوی کے مطابق ڈراموں میں جس طرح کی چیزیں دکھائی جائیں گی، بچے ویسا ہی کریں گے، اس لیے ڈراموں کے موضوعات تبدیل ہونے چاہیے اور انہیں تعمیری ہونا چاہیے۔انہوں نے ملک میں نئی نسل میں سکون آور ادویات کے استعمال کو بھی ڈراموں سے جوڑتے ہوئے کہا کہ اسی وجہ سے سکون آور اشیا کا استعمال بڑھ رہا ہے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے پاکستان ٹیلی وژن (پی ٹی وی) پر نشر ہونے والے ترک ڈرامے ارطغرل غازی کی تعریف کی اور کہا کہ وہ اچھا ڈراما ہے اور اس میں کسی بھی چیز کو غیر مہذب طریقے سے نہیں دکھایا گیا۔ثمینہ علوی نے بتایا کہ خاتون اول ہونے اور سیاست پر نظر رکھنے کے لیے وہ ٹاک شوز دیکھتی ہیں۔خاتون اول نے انٹرویو میں وزیر اعظم عمران خانکی اہلیہ بی بی بشریٰ کی تعریف کرتے ہوئے انہیں مہذب شخصیت کی مالک خاتون قرار دیا اور کہا کہ انہوں نے ان کے ساتھ ہر موضوع پر کھل کر اور اچھے طریقے سے بات کی۔بیگم ثمینہ علوی نے وزیر اعظم کی اہلیہ کے حوالے سے عام عوام میں پائے جانے والے خیالات کو غلط قرار دیا اور کہا کہ وہ ہر موضوع پر اچھی دسترس رکھتی ہیں اور ان کی شائستہ گفتگو سے ان کی مہذبانہ شخصیت کا اقرار ہوتا ہے۔انٹرویو کے دوران انہوں نے صدر مملکت سے سیاسی مسائل پر ہونے والی بحث پر بھی بات کی اور بتایا کہ وہ اپنے شوہر کو صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی کے مسائل کے حوالے سے آگاہ کرنے سمیت انہیں حل کرنے کے لیے کہتی رہتی ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں