بریکنگ نیوز: گاڑی کے شوقین افراد کے لیے شاندار سرپرائز ،پاکستان میں ڈیڑھ لاکھ کی گاڑی متعارف کروا دی گئی

لاہور (ویب ڈیسک) چینی کمپنی علی بابا کی جانب سے فروخت کی جانے والی گاڑی اب پاکستانی بھی خرید سکتے ہیں، چین میں تیار کی جانے والی الیکٹرک کار کی قیمت صرف ڈیڑھ لاکھ روپے، بذریعہ آن لائن خریداری ممکن، ایک مرتبہ مکمل چارج کے بعد 100کلومیٹر فاصلہ طے کر سکتی ہے۔ تفصیلات کے مطابق ایک

چینی کمپنی کی جانب سے دنیا کی سستی ترین گاڑی فروخت کی جا رہی ہے۔بتایا گیا ہے کہ اس گاڑی کی قیمت 1 ہزار امریکی ڈالرز سے بھی کم، یعنی تقریباً ڈیرھ لاکھ روپے پاکستانی ہے۔ 2 دروازوں والی یہ الیکٹرک کار چین کی مشہور کمپنی علی بابا کی جانب سے بذریعہ آن لائن فروخت کی جا رہی ہے۔یوں پاکستانیوں سمیت کسی بھی ملک کے شہری یہ گاڑی خرید سکتے ہیں۔اس گاڑی کو دنیا کی سستی ترین گاڑی قرار دیا جا رہا ہے۔تاہم قیمت کم ہونے کی وجہ سے گاڑی کا معیار اور خصوصیات بھی کچھ زیادہ متاثر کن نہیں ہیں۔گاڑی کی خصوصیات کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ دیگر گاڑیوں کے مقابلے میں اس گاڑی کا سائز قدرے کم ہے، جبکہ یہ مکمل طور پر الیکٹرک ہے۔ گاڑی کو مکمل چارج ہونے میں 10 گھنٹے کا وقت لگتا ہے، ایک مرتبہ مکمل چارج ہونے کے بعد یہ گاڑی 100 کلومیٹر کا فاصلہ طے کر سکتی ہے۔ تاہم گاڑی کی رفتار انتہائی کم ہے۔ گاڑی زیادہ سے زیادہ 35 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چلائی جا سکتی ہے۔

5 تبصرے “بریکنگ نیوز: گاڑی کے شوقین افراد کے لیے شاندار سرپرائز ،پاکستان میں ڈیڑھ لاکھ کی گاڑی متعارف کروا دی گئی

  1. بِسْمِ اللَّـهِ
    الرَّحْمَـٰنِ الرَّحِيمِ
    السَـــــــلاَمُ عَلَيــْــكُم
    وَرَحْمَةُ اللهِ وَبَرَكـَـاتُه ُ،
    آپ نے عدلِ فاروقی کے بارے میں تو سنا ھو گا مگر شاید صبرِ فاروقی کے بارے میں نہیں سنا ،
    حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کے بارے میں عام تأثر یہی ھے کہ آپؓ بہت سخت طبیعت کے مالک تھے ، مگر حقیقت یہ ھے کہ آپ نہایت رقت آمیز طبیعت کے مالک تھے ،آپ کی سختی اصول پر مبنی ھوتی تھی اور وہ ایک ایڈمنسٹریٹر کے لئے بہت ضروری بھی تھی …..
    امیرالومنینؓ عمر ابن الخطابؓ ایک معمولی گھر میں رھتے تھے کوئی 100 کنال کا محل تو تھا نہیں اندر کی بات باھر صاف سنائی دیتی تھی ، ایک بدو امیرالومنینؓ حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کے امارت کے زمانے میں ان کے پاس اپنی بیوی کی بد خلقی اور زبان درازی کی شکایت کرنے آیا ، وہ امیر المومنینؓ کے دروازے پہ پہنچا تو سنا کہ اندر سے امیرالومنینؓ کی زوجہ مسلسل بولے چلی جا رھی ھیں جبکہ امیرالومنینؓ بالکل خاموش ھیں
    اور پلٹ کر کوئی جواب نہیں دے رھے ،
    وہ کہنے لگا اگر یہ حال عمرؓ کا ھے جس کی سخت طبیعت اور مردانگی سے دنیا دھشت زدہ رھتی ھے اور وہ امیرالومنینؓ بھی ھیں ،
    تو میں کس کھیت کی مولی ھوں، یہ کہہ کر وہ پلٹا اور جانے لگا تو عمر فاروقؓ گھر سے باھر نکلے اور اس کو اپنے دروازے سے پلٹ کر جاتے دیکھا تو اسے آواز دی کہ بھائی کس حاجت سے آئے تھے ذرا بیان تو کردو ؟ ….
    اس شخص نے کہا کہ اے امیرالومنینؓ میں جس مصیبت کی شکایت کرنے آیا تھا اسی میں آپ کو بھی مبتلا دیکھا تو سوچا کہ اگر امیرالومنینؓ خود اس مصیبت میں مبتلا ھیں تو میری مصیبت کا مداوہ کیونکر کریں گے ، امیرالومنینؓ میں اپنی بیوی کی زبان درازی کی شکایت کرنے آیا تھا
    مگر آپ کے گھر کا احوال سن کرواپس جا رھا تھا ،
    امیرالومنینؓ عمر فاروقؓ نے اسے نصیحت کی ،فرمایا میرے بھائی اس کی یہ ساری باتیں میں اس کے ان احسانات کے بدلے برداشت کرتا ھوں جو وہ مجھ پر کرتی ھے ، وہ میرا کھانا تیار کرتی ھے ، میری روٹی پکاتی ھے ،میرے کپڑے دھوتی ھے ، میری اولاد کو دودھ پلاتی ھے میرے دین کی حفاظت کرتی ھے اور مجھے حرام سے بچاتی ھے اور یہ سب اس پر واجب بھی نہیں ھے ،
    اس شخص نے کہا کہ امیرالومنینؓ میری بیوی بھی یہ سب کام کرتی ھے ، آپ نے فرمایا تو پھر اس کو برداشت کرو بھائی ، فانھا مدۃ یسیرہ ،
    یہ تھوڑی سی مدت ھی کی تو بات ھے ، پھرنہ ھم رھیں گے اورنہ وہ ۔ یہ سن کر دیہاتی عرب نے کہا آپ سچ کہتےہیں امیرالومنینؓ اور واپس چل پڑا۔ اسے عملی سبق مل چکا تھا کہ بولنا عورت کا عیب نہیں بلکہ برداشت کرنا مرد کا امتحان ہے …..
    اللہ تعالی کی حمِد بِيان کرنا، ذکرکرنا ,نعمتوں کا شکرادا کرنا اﻭراس کی رضا میں‎ راضی رہنا اورصبر کا دامن نہ چهوڑنا دراصل مومن هونے کی نشانی هے …. زندگی ایک کتاب کی مانند ہے ، کچھ مضامین غمگین ہیں تو کچھ خوشگوار۔۔۔ لیکن جب تک آپ صفحہ نہ پلٹیں گے آپ کبھی بھی نہ جان سکیں گے کہ اگلے صفحے پر کیا ہے ؟ ۔
    زندگی مشکل ترین امتحان ہے ، بہت سے لوگ اس لئے فیل ہو جاتے ہیں چونکہ وہ دوسروں کی نقل کرتے ہیں ،
    یہ بات جانے بغیر کہ ہر کسی کا امتحانی سوالنامہ مختلف ہے ….
    يَآ الله ذُوالْجَلَالِ وَالْإِكْرَامِ سب بھائیوں بہنوں کو نیک اورپکیزہ شریک حیات بنے کی توفیق عطا فرما،
    يَآ الله تبارك وتعالى ہم سب پر اپنی خاص رحمتوں کا سایہ ہمیشہ قائم و دائم رکھنا کـہ ہم سـب جہـاں بھی رہیـں ہمیشـہ خُـوشـں اورآبـاد رہیں، ہمارﯼ ازدواجی زندگی کو ہمیشـہ خُـوشـں اورآبـاد سدا سکراتا رکھنا ،
    يَا الله ہم سب کو سلامتئ ايمان و صحت كے ساتھ سدا خوش و خرم رکھنا ، ہم سب ﮐﻮ ہمیشـہ ایک دوسرے کی حقیقی محبت قائم و دائم رکھنے کی توفیق عطا فرما،
    يَآ الله تبارك وتعالى ہم سب کو حضرت مُحَمَّدٌ مصطفیٰ صلی اللّہ علیہ وآلہ وسلم کی أمهات المؤمنين سے اورأمهات المؤمنين آپ صلی اللّہ علیہ وآلہ وسلم جیسی سچی محبت شریکِ حیات سے کرنےکی توفیق عطا فرما،
    يَآ الله سبحانہ وتعالی ہم سب ﺑﮯ ﭼﯿﻨﻮﮞ ﮐﻮﭼﯿﻦ ﻋﻄﺎ ﻓﺮﻣﺎ، ﺍﺟﮍﮮ ﮨﻮﺋﮯ ﮔﮭﺮﻭﮞ ﮐﻮ ﺁﺑﺎﺩ ﮐﺮﺩﮮ ﺍﻭﺭﺟﻦ ﮔﮭﺮﻭﮞ ﻣﯿﮟ ﻧﺎﺍﺗﻘﺎﻓﯽ ﮨﮯ ﺍﻧﮑﻮﺍﺗﻔﺎﻕ ﮐﯽ ﺩﻭﻟﺖ ﺳﮯ ﻣﺎﻻﻣﺎﻝ ﮐﺮﺩﮮ، يَآ الله سبحانہ وتعالی ہم سب کی اصلاح کی توفیق عطا فرما،
    يَآ الله جو زندگی گناہوں میں کٹ گئی ہے اس پرمعاف فرما اورجو قدم اچھائی اورنیکی کی طرف لے جائیں ان پرثابت قدم رہنے کی توفیق عطا فرما ،
    يَآ الله ہم ﮔﻤﺮﺍﮨﻮﮞ ﮐﻮ ﺭﺍﮦ ﭘﺮ ﻟﮯ ﺁ ،
    يَآ الله ﮨﻤﯿﮟ ﺑﻬﯽ ﺍﻥ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺷﺎﻣﻞ ﻓﺮﻣﺎ ﻟﮯ ﺟﻨﻬﯿﮟ ﺗﻮ ﮨﺪﺍﯾﺖ ﻓﺮﻣﺎﺗﺎ ﮨﮯ،
    يَآ الله ہمیں ایسی زندگی گزارنے کی توفیق عطا کرجس زندگی سے تو راضی ہوجائے،
    يَآ اللہ ہم سب کی دلی مرادیں، تمنائیں، خواہشیں، آسیں، امیدیں پوری فرما ہم سب کی تمام ترحاجات کوپورا فرما،
    يَآ اللہ ہم سب کو آسانياں عطا فرما اورآسانياں بانٹنے كا شرف عطا فرما ہم سب پر سدا رحمت بركت عنایات فرما،
    يَآ الله رَبَّ العزت ہمیں اپنے سوا کسی محتاج نہ کرنا اورہم پراپنا فضل اوراپنی رحمت نازل فرما ، سب کے لیئے خیر کا دن ہو
    يَآ اللہ ہرپریشانی دکھ درد بیماری آفت مصیبت انہونے حادثات سے محفوظ اپنے حفظ وامان میں رکھنا سب پراپنا کرم بناۓ رکھنا گھروں میں اوردلوں میں سکون اتفاق رہے،
    يَآ الله ہم سب پراپنا رحم فرما، يَا اللہ رَبَّ العزت اس وقت کو قبولیت کی گھڑی بنا دے ،
    يَا الله تیرے ” کن” کے محتاج ہیں مولا قبول فرما لے يَآ اللہ عزوجل ہمیں رسول اللہ ﷺ رَحْمَةً لِّلْعَالَمِينَ وَخَاتَمَ النَّبِیّٖنَ کی اطاعت
    کرنے کی توفیق عطا فرما،
    يَآ ذُوالْجَلَالِ وَالْإِكْرَامِ يَآ اللہ !
    تیرے حضور ہاتھ پھیلائے ہیں تواپنے فضل وکرم اوررحمت وبرکت سے ہماری دعائیں اپنی شان کے مطابق قبول فرما،
    يَآ اللَّهُ يَآ الرَّحْمَنُ يَآ الرَّحِيمُ يَآ ذُوالْجَلَالِ وَالْإِكْرَامِ
    يَآ الْحَيُّ يَآ الْقَيُّومُ بِرَحْمَتِكَ أَسْتَغِیْث O لَا إلَهَ إِلَّا اللَّهُ الْعَظـيمُ الْحَلِـيمْ، لَا إِلَهَ إِلَّا اللَّهُ رَبُّ العَـرْشِ العَظِيـمِ، لَا إِلَـهَ إِلَّا اللَّهْ رَبُّ السَّمَـوّاتِ ورّبُّ الأَرْضِ ورَبُّ العَرْشِ الكَـريم O بِرَحْمَتِكَ يَآ أَرْحَمَ الرَّحِمِينَ-
    آمِينْ
    اللهم امين يارب العالمين ہ
    والصلاة والسلام على سيدنا محمد وعلى آله وصحبه أجمعين في العالمين ہ
    استغفر الله العظيم الذي لا اله الا هو الحي القيوم وأتوب إليه ہ
    لا اله إلا انت سبحانك اني كنت من الظالمين
    منقول

اپنا تبصرہ بھیجیں