خطے کے امن کو خطرے میں ڈال دینے والی خبر آگئی

لاہور (ویب ڈیسک)آزاد کشمیر کے صدر سردار مسعود خان ایک سیمینار میں خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان لڑائی کے خدشات بہت زیادہ ہیں۔نجی ٹی وی چینل کے مطابق لاہور میں ایک ریسرچ سینٹر کے زیر اہتمام کشمیریوں پر ظلم کے موضوع پر ویڈیو لنک سیمینار کا اہتمام کیا گیا۔

سیمینار میں صدر آزاد کشمیر سردار مسعود خان، حریت رہنما یاسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک اور پیپلز پارٹی کی رہنما شیری رحمان سمیت دیگر نے شرکت کی تھی۔سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے صدر آزاد کشمیر سردار مسعود خان کا کہنا تھا کہ دنیا میں کہیں ایٹمی لڑائی ہونی ہے تو وہ جنوبی ایشیا کے خطے میں ہوگی۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان لڑائی کے خدشات بہت زیادہ ہیں، ہندوتوا کی بھرپور مخالفت کرنا ہوگی، کشمیر نیوکلئیر فلیش پوائنٹ بن چکا ہے۔ دوسری جانب ایک اور خبر کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے ملک کی جانب سے جاری کئی لڑائیوں کو فضول قرار دے دیا۔ اپنی انتخابی مہم کے دوران فلوریڈا کے شہر سینڈفورڈ میں ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم امریکا کو دنیا کی فضول لڑائیوں سے باہر نکالیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم ان بے نتیجہ اور فضول لڑائیوں کے بجائے مشرقِ وسطیٰ میں امن لا رہے ہیں۔ ان کا اشارہ اسرائیل کے ساتھ مزید عرب ممالک کے معاہدوں کی جانب تھا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ4سال کی نسبت اس بار بڑی کامیابی ملے گی، کیوں کہ ہم 2016ء کے مقابلے میں بہتر کارکردگی کامظاہرہ کر رہے ہیں۔ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ میں کورونا سے مکمل صحت یاب ہو چکا ہوں اور بہت زیادہ طاقت ور محسوس کررہا ہوں۔ ان کا کہنا تھا کہ موجودہ انتخابات امریکی تاریخ کے سب سے اہم انتخابات ہیں۔ انہوں نے اپنے حریف کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ جوبائیڈن اچھا آدمی نہیں ہے۔ وہ بھول گیا کہ کون سی ریاست میں خطاب کررہا ہے۔ وہ کہتا ہے کہ میں سینیٹ کے انتخا ب لڑ رہا ہوں۔ خیال رہے کہ نومبر میں امریکا میں انتخابات ہوں گے اور جوبائیڈن صدر ٹرمپ کے لیے سخت حریف ثابت ہو رہے ہیں۔ صدارتی انتخابات سے پہلے ہونے والے پول سروے کے مطابق ڈیموکریٹک امیدوار جو بائیڈن کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پر برتری حاصل ہے۔ پولز کے مطابق جوبائیڈن53 اور ٹرمپ کو42 فیصد حمایت حاصل ہے، لیکن اس برتری کی بنیاد پر ہار جیت کا فیصلہ نہیں ہوسکتا۔ 2016ء کے پولز میں ہیلری کلنٹن کو برتری حاصل تھی، لیکن وہ الیکشن ہار گئی تھیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں