یہ ہے (ن )لیگ کی مقبولیت کا گراف ۔۔۔کتنے فیصد پاکستانی چاہتے ہیں کہ نواز شریف واپس آکر مقدمات کا سامنا کریں؟ گیلپ سروے میں رائے عامہ سامنے آگئی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) گیلپ پاکستان کی جانب سے کیے جانے والے سروے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ پاکستانیوں کی اکثریت چاہتی ہے کہ میاں نواز شریف وطن واپس آکر عدالتوں کا سامنا کریں۔گیلپ کی جانب سے کرائے جانے والے سروے میں شریک 78 فیصد پاکستانیوں نے کہا کہ نواز شریف کو پاکستان واپس آکر

مقدمات کا سامنا کرنا چاہیے۔ سروے میں شریک صرف 15 فیصد لوگ ایسے تھے جو نواز شریف کی وطن واپسی کے مخالف تھے۔سروے میں نواز شریف کی اے پی سی میں کی جانے والی تقریر کے حوالے سے بھی لوگوں سے سوالات پوچھے گئے۔ سروے کے 39 فیصد شرکا نے کہا کہ وہ نواز شریف کی تقریر سے اتفاق نہیں رکھتے جبکہ 33 فیصد نے کہا کہ نواز شریف نے درست نکات پر بات کی۔گیلپ سروے کے مطابق 7 فیصد پاکستانی سمجھتے ہیں کہ عمران خان نے معیشت کا بیڑہ غرق کردیا ہے جبکہ 41 فیصد اس بات سے اتفاق نہیں رکھتے۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق نیب نے سابق وزیراعظم نواز شریف کا پاسپورٹ اور شناختی کارڈ منسوخ کرنے کی سفارش کر دی ہے ۔ڈی جی نیب راولپنڈی کی جانب سے وزارت داخلہ کو بھیجے گئے خط میں توشہ خانہ ریفرنس کا حوالہ دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ نواز شریف کے وارنٹ گرفتاری عدالت سے جاری ہو چکے ہیں۔خط میں کہا گیا ہے کہ نواز شریف کے اشتہاری قرار دینے کا عمل بھی شروع کر دیا گیا ہے، لہذا نواز شریف کی سفری دستاویزات کو منسوخ کیا جائے۔نیب کی جانب سے وزارت داخلہ کو نواز شریف کا پاسپورٹ کو منسوخ کرنے اور شناختی کارڈ کو بلیک لسٹ میں شامل کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔خط میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ نواز شریف کو وطن واپس لانے کے لیے وزارت داخلہ انٹرپول سے بھی رابطہ کرے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں