تبدیلی کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے ۔۔۔!! شیخ رشید عمران خان کو کس طرح الو بناتے رہے ؟ رپورٹ سامنے آتے ہی وزیر اعظم عمران خان بھی سر پکڑ لیں گے

لاہور(ویب ڈیسک)پاکستان ریلوے کا مالی خسارہ مزید بڑھ گیا، ریلوے مالی سال 21-2020 کے پہلے اڑھائی ماہ میں آمدنی کا ہدف پورا کرنے میں ناکام ہوگیا، پہلے اڑھائی ماہ میں حکومتی ہدف سے 7ارب 61کروڑ روپے کم آمدنی ہوئی۔ذرائع کے مطابق آمدنی کا ہدف 15 ارب 68 کروڑ روپے مقرر کیا گیا تھا، جبکہ ریلوے اعدادوشمار

کے مطابق محکمہ ریلوے صرف 8 ارب 6 کروڑ 41 لاکھ روپے ہی کما سکا، ریلوے آمدنی حکومتی ہدف سے 48 فیصد کم ریکارڈ کی گئی۔ ذرائع کے مطابق ریلوے کیلئے روزانہ آمدنی کا ہدف 196 ملین روپے رکھا گیا تھاجبکہ ریلوے آمدنی 100 ملین روپے روزانہ ریکارڈ کی گئی۔مسافر، گڈز، متفرق کوچز اور سنڈری سمیت تمام مدات میں کم آمدنی ہوئی، مسافروں کی مد میں ریلوے کو 5 ارب 40 کروڑ 46 لاکھ روپے کم آمدنی ہوئی، گڈز سیکٹر میں ریلوے کو ہدف سے 1 ارب 65 کروڑ 81 لاکھ روپے کم آمدنی ہوئی جبکہ متفرق کوچز کی مد میں 33 کروڑ 59 لاکھ روپے کم آمدنی ہوئی۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا ہے کہ سندھ حکومت ہر معاملے پر ہمارے ساتھ اتفاق کرے گی،آصف زرداری عقل مند ہیں، اس میں کوئی شبہ نہیں ہے، پیپلزپارٹی کی ریلی کی مجھے کوئی سمجھ نہیں آئی۔ انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اپوزيشن کی تحریک کا ماڈل بڑا دلچسپ ہے۔ کرپشن کا گرینڈ الائنس بنا ہے۔اس کی قیادت مولانا فضل الرحمان کے پاس ہے۔ سراج الحق ہمارے ناقد ہیں لیکن جو بات ٹھیک ہے وہ ٹھیک ہے۔ سراج الحق کے گھر کی چھت ٹپکتی ہےاور مولانا فضل الرحمان کے پاس اربوں روپے ہيں۔ کیا وجہ ہے فضل الرحمان کے پاس اربوں روپے ہیں جبکہ سراج الحق کے پاس پیسا نہيں۔ نواز شریف کا مطالبہ تھا کہ پاناما کی تحقیق میں ان کی کرپشن چھپانےمیں مدد کی جانی چاہیے۔ن لیگ اور پیپلزپاٹی کو اپنی سیاست کیلئے فضل الرحمان اور مدرسے کے بچوں کا سہارا لینا پڑرہا ہے۔ ان کو آج شدت پسند گروہ کا سہارا لینا پڑرہا ہے۔ ن لیگ کو مشورہ دیا تھا کہ اپنے جلسے شادی ہالز میں کرا لیا کریں۔ آج انتشار پھیلانے کی مہم شروع کی گئی ہے۔ یہ تحریک ابو بچاؤ مہم کے طور پر شروع ہوئی تھی۔ انتشار پھیلاؤ مہم بھی ابو بچاؤ مہم کی طرح ناکام ہوگی۔مریم کے ابو اور ان کے پیسے واپس نہ لیے جائيں اور اس کیلئے عوام باہر نکلیں۔ ابو بچاؤ تحریک پاکستان انتشار پارٹی کے طورپر سامنے آئی ہے۔ فواد چودھری نے کہا کہ نوازشریف کی تقریر پر حکومت نے پابندی نہیں لگائی، پیمرا نے عدالت کی ہدایت پر پابندی لگائی ہے۔ عدالت نے مفرور اور سزا یافتہ پر پابندی لگائی ہے۔ ن لیگ کو چاہیے پابندی کیخلاف عدالت سے رجوع کرے، کیونکہ نوازشریف جتنا بولتے ہیں خود کو بے نقاب کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ بجلی کا بہتر انداز سے استعمال کرکے ہم بجلی کو استعمال میں لاسکتے ہیں۔ وزیراعلیٰ سے بھی ملیں گے۔ کراچی میں بجلی کا مسئلہ بھی حل کرکے رہیں گے۔ کراچی میں آلودگی کی ایک وجہ پبلک ٹرانسپورٹ بھی ہے۔ ہم چاہتے ہیں کراچی میں پبلک ٹرانسپورٹ کو بجلی پر منتقل کردیں۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت ہر معاملے پر ہمارے ساتھ اتفاق کرے گی،آصف زرداری عقل مند ہیں، اس میں کوئی شبہ نہیں ہے، پیپلزپارٹی کی ریلی کی مجھے کوئی سمجھ نہیں آئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں