بنی گالہ کے سب سے لاڈلے ،وزیراعلیٰ پنجاب کا ہیلی کاپٹر سفید ہاتھی بن گیا، مرمت کیلئے مزید کتنی رقم مانگ لی گئی؟ محکمہ خزانہ بھی حیران پریشان

لاہور(ویب ڈیسک) وزیراعلی پنجاب کے زیراستعمال ہیلی کاپٹرخزانے پر بوجھ بننے لگے۔سردارعثمان بزدارکے زیراستعمال ہیلی کاپٹرکی چند گھنٹے کی اڑان سے محکمہ خزانہ پریشان ہوگیا، ہیلی کاپٹر کی مرمت کے لیے مزید 2 کروڑ 35 لاکھ روپے مانگ لئے گئے۔ذرائع کے مطابق وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کے زیراستعمال ہیلی کاپٹرخزانے پر بوجھ بننے لگے۔ وی آئی پی فلائٹس

سیکشن کی جانب سے ا یک بار پھر محکمہ خزانہ پنجاب سے رجوع کیا گیا ہے کہ وی آئی پی فلائٹس کی مرمت اور دیگرضروری اقدامات کےلیے فنڈز کا اجرا کیا جائے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ محکمہ خزانہ پنجاب نے یہ ایجنڈا کابینہ کو ارسال کردیا ہے۔ سروس رینڈرڈ،ٹیکس اور ایئرٹرانسپورٹ کی مد میں وی آئی پی فلائٹس کی جانب سے فنڈز مانگے گئے ہیں۔ وی آئی پی فلائٹس کے پائلٹس کونئے کورسز کی تربیت بھی کرائی جائےگی۔ اس سے قبل بھی ہیلی کاپٹر کی مرمت اور پرزوں کے لیے 2 کروڑ 79 لاکھ روپے کی منظوری دی گئی تھی۔ کاک پٹ کی تبدیلی کے لیے52 لاکھ روپے دیئے گئے تھے،جبکہ فلائٹ ڈیٹا ایکوزیشن یونٹ کی تبدیلی پر 2 کروڑ 26 لاکھ روپے اخراجات کیے گئے ہیں۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وفاقی وزیر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا ہے کہ سندھ حکومت ہر معاملے پر ہمارے ساتھ اتفاق کرے گی،آصف زرداری عقل مند ہیں، اس میں کوئی شبہ نہیں ہے، پیپلزپارٹی کی ریلی کی مجھے کوئی سمجھ نہیں آئی۔ انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اپوزيشن کی تحریک کا ماڈل بڑا دلچسپ ہے۔ کرپشن کا گرینڈ الائنس بنا ہے۔اس کی قیادت مولانا فضل الرحمان کے پاس ہے۔ سراج الحق ہمارے ناقد ہیں لیکن جو بات ٹھیک ہے وہ ٹھیک ہے۔ سراج الحق کے گھر کی چھت ٹپکتی ہےاور مولانا فضل الرحمان کے پاس اربوں روپے ہيں۔ کیا وجہ ہے فضل الرحمان کے پاس اربوں روپے ہیں جبکہ سراج الحق کے پاس پیسا نہيں۔ نواز شریف کا مطالبہ تھا کہ پاناما کی تحقیق میں ان کی کرپشن چھپانےمیں مدد کی جانی چاہیے۔ن لیگ اور پیپلزپاٹی کو اپنی سیاست کیلئے فضل الرحمان اور مدرسے کے بچوں کا سہارا لینا پڑرہا ہے۔ ان کو آج شدت پسند گروہ کا سہارا لینا پڑرہا ہے۔ ن لیگ کو مشورہ دیا تھا کہ اپنے جلسے شادی ہالز میں کرا لیا کریں۔ آج انتشار پھیلانے کی مہم شروع کی گئی ہے۔ یہ تحریک ابو بچاؤ مہم کے طور پر شروع ہوئی تھی۔ انتشار پھیلاؤ مہم بھی ابو بچاؤ مہم کی طرح ناکام ہوگی۔مریم کے ابو اور ان کے پیسے واپس نہ لیے جائيں اور اس کیلئے عوام باہر نکلیں۔ ابو بچاؤ تحریک پاکستان انتشار پارٹی کے طورپر سامنے آئی ہے۔ فواد چودھری نے کہا کہ نوازشریف کی تقریر پر حکومت نے پابندی نہیں لگائی، پیمرا نے عدالت کی ہدایت پر پابندی لگائی ہے۔ عدالت نے مفرور اور سزا یافتہ پر پابندی لگائی ہے۔ ن لیگ کو چاہیے پابندی کیخلاف عدالت سے رجوع کرے، کیونکہ نوازشریف جتنا بولتے ہیں خود کو بے نقاب کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ بجلی کا بہتر انداز سے استعمال کرکے ہم بجلی کو استعمال میں لاسکتے ہیں۔ وزیراعلیٰ سے بھی ملیں گے۔ کراچی میں بجلی کا مسئلہ بھی حل کرکے رہیں گے۔ کراچی میں آلودگی کی ایک وجہ پبلک ٹرانسپورٹ بھی ہے۔ ہم چاہتے ہیں کراچی میں پبلک ٹرانسپورٹ کو بجلی پر منتقل کردیں۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت ہر معاملے پر ہمارے ساتھ اتفاق کرے گی،آصف زرداری عقل مند ہیں، اس میں کوئی شبہ نہیں ہے، پیپلزپارٹی کی ریلی کی مجھے کوئی سمجھ نہیں آئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں