تحقیقاتی کمیٹی کی رپورٹ نے تہلکہ مچا دیا

لاہور(نیوز ڈیسک )طلال چوہدری کا معاملہ، تحقیقاتی کمیٹی کی رپورٹ منظر عام پر آگئی، ج-ھگڑا طلال چودھری کی جانب سے خاتون ایم این اے عائشہ رجب کے بیٹے کو اکسانے پر ہوا۔نجی چینل سما نیوز کے مطابق ن لیگ کی تحقیقاتی کمیٹی نے مکمل رپورٹ پارٹی قیادت کو پیش کر دی۔رپورٹ

کے مطابق واقعہ طلال چودھری کی جانب سے خاتون ایم این اے کے بیٹے کو اکسانے پر پیش آیا۔ایک بڑی سیاسی شخصیت کی جانب سے خاتون ایم این اے عائشہ رجب کو شادی کی آفر پر طلال چوہدری ناراض تھے،طلال چوہدری نے خاتون ایم این کے بیٹے کو سیاسی شخصیت کے ساتھ والدہ کا فون ڈیٹا اور میسجزدکھائے، بیٹے نے والدہ کو شادی سے منع کیا اور Khudkashi کی دھمکی دی۔خاتون ایم این اے نے گھبراکر بھائی کو بلایا اور بیٹے سے پوچھا تو اس نے بتایا کہ اسے طلال چوہدری نے ڈیٹا دکھایا۔ بیٹے کے انکشاف پر طلال چوہدری کوفون کر کے خاتون ایم این اے کے گھر بلایاگیا۔طلال چوہدری کی آمد پر خاتون کے بھائی نے ڈیٹا سے متعلق پوچھا توطلال چوہدری کے انکار پر Jhagra ہوا اور ویڈیو بھی بنائی گئی، طلال چوہدری Jhagre کے بعد دوست کے گھر گئے اور انہیں موبائل واپس لانے کے لیے کہا۔ طلال چوہدری اپنے دوستوں کے ساتھ اپنا موبائل لینے دوبارہ گئے تو خاتون نے 15پر کال کر دی، اسی دوران طلال چوہدری نے بھی پولیس کو فون کر کے بلا لیا تو معاملہ بگڑ گیا۔

خیال رہے 23ستمبر کو طلال چوہدری پرخاتون ایم این اے کے گھر کے باہر tashadudکی خبریں سامنے آئی تھیں، جس پر طلال چوہدری نے موقف اپنایا تھا کہ مجھے قانون سازی کے لیے بلا کر tashadud کیا گیا ، اس کے بعد پارٹی کی جانب سے تحقیقاتی کمیٹی بنائی گئی تھی جس نے رپورٹ پارٹی کو پیش کی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں