محمدبن سلمان نے اپنے باپ کواسرائیل معاملےپردھوکادیا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )اسرائیل کوتسلیم کرنےکے معاملے پران دنوںسعودی شاہی خاندان میں لڑائیاں چل رہی ہیں ۔شہزادوں کی نئی اسرائیل کوتسلیم کرنےکے حق میں ہے جبکہ سعودی بادشاہ اورشاہی خاندان کے دیگربزرگ اسرائیل کوتسلیم کرنے کے سخت مخالف ہیں۔ امریکی اخباروال سٹریٹ جنرل نے تہلکہ خیزانکشاف کرتے ہوئےکہاہےکہ اسرائیل سعودی ولی عہدمحمدبن سلمان پرپریشرڈال رہاہے کہ پاکستانی فوج کوسعودی عرب سے نکال کران کی جگہ اسرائیل کی فوج کوتعینات کیاجائے۔وال سٹریٹ جنرل نے اسرائیل کوتسلیم کرنے کے معاملے پرانکشاف کرتے ہوئے کہاکہ

سعودی شاہی خاندان میں اس معاملے پرلڑائی ہوچکی ہے۔اخبارکہتاہے کہ 13اگست کوامریکی صدر نے اعلان کیاکہ متحدہ عرب امارات اوراسرائیل کے درمیان امن معاہدہ طے پاگیاہے۔سعودی عرب کے بادشاہ محمدبن سلمان کواس معاملے سے لاعلم رکھاگیا۔جب میڈیاپرخبرچلی توشاہ سلمان کوادراک ہواکہ میری پیٹھ کے پیچھے میرے ہی بیٹے نے چھراگھونپامعاملہ صرف یہاں تک نہ رکاشاہ سلمان پراس وقت قیامت ٹوٹ پڑی جب انہیں اس بات کاعلم ہواکہ سعودی عرب بھی اسرائیل کوتسلیم کرنے جارہاہے۔جس کے بعد ان کی اپنے بیٹے سے شدیدلڑائی ہوئی انہوں نے فوری طورپرحکومتی نمائندےکوبلایااورکہاکہ تم بیان جاری کروکہ سعودی عرب اسی جگہ سٹینڈ کرےگاجہاں پر2002میں عرب ریاستوں نے فیصلہ کیاتھا۔محمدبن سلمان کومعلوم تھاکہ اگراس معاملے کاشاہ سلمان کوعلم ہواتوانہوںنے ڈیل کینسل کروادینی ہےاوراگرشاہ سلمان اس معاملے کے بیچ میں کودپڑتےتویواے ای اوربحرین سمیت یہ ممالک سعودی عرب کوتسلیم نہ کرتے۔محمدبن سلمان ٹرمپ کوفون کرتے ہیں جبکہ جیراڈکشنرسے ملاقات کرکے کہتے ہیں کہ میراباپ اسرائیل کوتسلیم نہیں کرتااوراس معاملے کی راہ میں رکاوٹ بناہواہے۔فی الحال میں ایک کام کرتاہوں کہ مراکش ،سوڈان اوربحرین آپ کوتسلیم کرنے جارہےہیں۔جیسے ہی اپنے باپ کومنالیاجائیگاتوسعودی عرب بھی آپ کوتسلیم کرلے گا۔شاہ سلمان پاکستان کے علاوہ کسی ملک کی فوج پربھروسہ نہیں کرتے یہ اس طبقے سے تعلق رکھتے ہیں جوشاہ فیصل کے دورسے ہوتاہواچلتاآرہاہے ۔شاہ فیصل کہتے تھے کہ دنیاکوبتائیں کہ یہودی زائنسٹ دنیاکے دشمن ہیںمسجداقصیٰ قیدمیں ہے اورہم نے لڑناہے۔شاہ سلمان شاہ فیصل کی آڈیالوجی کوآگے لیکرچلنے والے ہیں۔اسرائیل کوتسلیم کرانےکےلیے شاہ سلمان کے سائن چاہئیں ۔محمدبن سلمان جتنے بھی طاقتورکیوں نہ ہوں لیکن اس معاملے میں ان کوشاہ سلمان کےسائن چاہئیں۔شاہ سلمان یہودیوں سے نفرت رکھتے ہیں لیکن محمدبن سلمان نے تین سال میں سعودی عرب کی کایاپلٹ دی۔شاہی خاندان میں اسرائیل کوتسلیم کرنے کے معاملےپرلڑائیاں چل رہی ہیں۔محمد بن سلمان نے اپنے چچااورکزن کوگرفتارکروالیاہے۔وہ نہیں چاہتے کہ سعودی عرب اسرائیل کوتسلیم کرے۔محمدبن سلمان یہودیوں کی محبت میں اتنے آگے نکل گئے ہیں کہ ویژن 2030کے تحت 500ارب ڈالر کی خطیررقم سے تعمیرہونیوالے نیوم سٹی کےحوالے سے بھی یہ خبریں گردش کررہی ہیں کہ اسے بھی اسرائیل تعمیرکرے گا۔