معاملہ بہت پیچیدہ ہوگیا!

لاہور(نیوز ڈیسک ) سینئر تجزیہ کار ہارون الرشید کا کہنا ہے کہ موٹروے پر پیش آنے والا دلخراش واقعہ اتنا سادہ نہیں جتنا میڈیا پر پیش کیا جا رہا اور جیسے سیاستدان پیش کر رہے ہیں۔کئی عوامل بتاتے ہیں کہ معاملہ پیچیدہ ہے۔کئی اور پہلو سامنے آنے والے ہیں۔اس کے ہم سب ذمہ دار ہیں۔حکومت ذمہ دار ہیں جو پولیس اصلاحات نہیں

کرتی۔اپوزیشن بھی ذمہ دار ہے جو اصلاحات کے لیے اصرار نہیں کرتی۔پولیس میں اصلاحات اور عدلیہ کی بہتری کے بغیر معاشرے میں جرائم کا خاتمہ ہو ہی نہیں سکتا۔ہارون الرشید نے مزید کہا کہ موٹروے پر زیادہ سے زیادہ 45 منٹ کا راستہ ہے۔خاتون ڈیڑھ گھنٹے میں وہاں پر کیسے پہنچیں۔جب فون ہوا تو گھر سے کسی نے پہنچنے کی کوشش کیوں نہیں کی۔2 بج کر ایک منٹ پر کال ہوتی ہے۔مجرم 2 بج کر 45 منٹ پر نمودار ہوتے ہیں۔کیا اس میں کوئی ایسا شخص تھا جس نے ان کو یہ کہا کہ موقع موجود ہے۔کیا کوئی ایسا شخص ملوث ہے جسے معلوم ہو گیا کہ عورت اکیلی ہے۔دوسری جانب ملزم عابد علی کی گرفتاری کے لیے پولیس کی ٹیمیں شیخو پورا کے علاقے قلعہ ستار شاہ پہنچ گئیں اور علاقے کا محاصرہ کر لیا، اس دوران ایک خاتون کو بھی حراست میں لے لیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق سانحہ موٹروے میں ملوث ملزم عابد علی کی گرفتاری کے لیے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی ٹیمیں قلعہ ستار شاہ پہنچ چکی ہیں۔ اور علاقے کا محاصرہ کر لیا ہے ۔ پولیس نے وہاں سے ایک خاتون کو حراست میں لے لیا ہے جبکہ ذرائع کا کہنا ہے کہ ملزم عاد علی گھر کے اندر ہی موجود ہے۔ دوسری جانب لزم عابد ولد اکبر علی کی والد کا بیان بھی سامنے آگیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے عابد کے والد اکبر علی کا کہنا ہے کہ انکا بیٹا شیخوپورہ روڈ پر قلعہ ستار شاہ میں رہائش پذیر تھا، عابد علی شادی شدہ ہے اور اکی ایک بیٹی بھی ہے، عابد نے کچھ عرصہ قبل پسند کی شادی کی تھی، اکبر علی کی جانب سے اس بات کی بھی تصدیق کی گئی کہ انکا بیٹا 2 روز قبل شام 6 بجے میرے گھر چھانگا مانگا اچانک آگیا تھا، ایک رات گزارے کے بعد اگلے دن وہ میرے گھر سے روانہ ہوگیا، عابد نے صرف تیسری جماعت تک تعلیم حاصل کر رکھی ہے اگر وہ اس گھناؤنے فیل میں ملوث ہے تو بیشک اسے گولی مار دی جائے۔ یہاں پر یہ امر بھی قابلِ ذکر ہے کہ کریمنل ڈیٹا بیس میں عابد علی 2013ء سے موجود ہے، ملزم عابد علی کوتاحال گرفتار نہیں کیا جاسکا۔ ملزم کی گرفتاری کیلئے سی ٹی ڈی کی جانب سے چھاپے مارےجارہے ہیں۔دوسری جانب انحہ موٹروے، دوسرے ملزم کو بھی گرفتار کر لیا گیا ہے۔ چینل فائیو کے مطابق تحقیقاتی اداروں نے سانحہ موٹر وے میں ملوث دوسرے ملزم کو بھی گرفتار کر لیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں