پاکستان کے مشہور ادیب کو وفات کے 40 سال بعد ستارہ امتیاز سے نواز دیاگیا

کراچی (ویب ڈیسک) شہرۂ آفاق ناول نگار اور جاسوسی ادب کے مقبول ترین کردار علی عمران کے خالق ابنِ صفی کو حکومت نے ستارۂ امتیاز سے نوازا ہے۔ یومِ دفاع کے موقع پر ایوانِ صدر اسلام آباد سمیت چاروں صوبوں کے گورنر ہاؤسز میں سول ایوارڈز سے نوازنے کے لیے تقریبات کا انعقاد کیا گیا تھا

جس میں فنونِ لطیفہ سے وابستہ شخصیات کو اعزازات دیے گئے اور انہی میں‌ ایک نام ابنِ‌ صفی کا بھی تھا۔1980 میں انتقال کر جانے والے اس ادیب کا اصل نام اسرار احمد تھا، جو دنیا بھر میں‌ قلمی نام ابنِ صفی سے پہچانے گئے۔1948 میں بی اے کی ڈگری حاصل کرنے کے بعد اسرار احمد نے سنجیدگی سے قلم تھاما اور ان کی پہلی کہانی ایک جریدے میں شائع ہوئی جس کے بعد ہر ماہ ایک جاسوسی ناول لکھنے کا آغاز ہوا اور انھوں‌ نے خود کو ابنِ صفی کے نام سے متعارف کروایا اور آج بھی جاسوسی ادب میں یہ نام سرِفہرست اور نہایت معتبر ہے۔وہ 1952 میں پاکستان آگئے تھے اور یہاں جاسوسی دنیا کا وہ لازوال اور مقبول ترین کردار سامنے لائے جس نے گویا انھیں شہرت کے ہفت آسمان طے کروا دیے، یہ کردار تھا علی عمران۔یہ 1955 کی بات ہے اور اس کے بعد 1957 سے 1960 تک ابنِ صفی کا تخلیقی جوہر عروج پر نظر آیا۔ انھوں نے فریدی اور حمید جیسے جاسوسی کردار متعارف کروائے اور اسی دوران جاسوسی ناولوں شیدا قارئین عمران سیریز کے دیوانے ہوچکے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں