سنتھیا ڈی رچی نے جب ورک ویزہ کی درخواست دی تو انکے ساتھ کیا کِیا گیا؟ ایک اور پنڈورا باکس کھل گیا

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) امریکی خاتون سینتھیا رچی کی ورک ویزا کی درخواست پر وزارت داخلہ کی جانب سے بزنس ویزا جاری کیا جانے کا انکشاف ہوا ہے۔سیکرٹری داخلہ کے اسلام آباد ہائیکورٹ میں جمع تحریری جواب کے مطابق وزارت داخلہ نے 2018 اور 2019 میں دو بار خلاف قانون سینتھیا رچی کے ویزہ میں توسیع کی۔سینتھیا

نے دونوں بار بزنس ویزہ کیلئے نہیں بلکہ ورک ویزہ توسیع کی درخواست دی تھی، تاہم ورک ویزہ کی بجائے بزنس ویزہ جاری کرنا ویزہ پالیسی کی خلاف ورزی تھی۔تحریری جواب کے مطابق سینتھیا نے متعلقہ دستاویزات بھی ورک ویزہ کے ساتھ لگائیں لیکن بزنس ویزہ جاری کیا جاتا رہا ۔ سینتھیا رچی اپنی جس کمپنی کے ذریعے دیگر کمپنیوں کے ساتھ کام کرتی تھیں وہ کمپنی پاکستان میں رجسٹرڈ ہی نہیں، لیکن پاکستان میں موجود کمپنیز ایس ای سی پی کے پاس رجسٹرڈ ہیں، سینتھیا کو ایسے متنازعہ بیانات دینے سے روکا جانا چاہیے جن سے شہریوں کے بنیادی حقوق پر اثرانداز ہوں۔دوسری جانب سنتھیا ڈی رچی نے اپنے اوپر لگے الزامات کی تردید کی ہے۔دوسری جانب مریکی خاتون سنتھیا رچی کی سابق وزیرِ داخلہ و پیپلز پارٹی کے سینیٹر رحمٰن ملک کے خلاف درخواست کے معاملے پر رحمٰن ملک نے اسلام آباد ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کر لیا۔ جسٹس آف پیس نے رحمٰن ملک کے خلاف مقدمے کے اندراج کی درخواست مسترد کر دی تھی۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے جسٹس آف پیس کا فیصلہ کالعدم قرار دے دیا تھا۔ رحمٰن ملک نے سپریم کورٹ آف پاکستان میں دائر کی گئی درخواست میں مؤقف اختیار کیا ہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے مؤقف پیش کرنے کا موقع نہیں دیا۔ انہوں نے اپنی درخواست میں مزید کہا ہے کہ سنتھیا رچی کے الزامات من گھڑت اور بے بنیاد ہیں، اسلام آباد ہائی کورٹ کا کیس بینچ نمبر 2 سے 1 میں منتقل کرنا سمجھ سے

بالا تر ہے۔ رحمٰن ملک نے اپنی درخواست میں عدالتِ عظمیٰ سے استدعا کی ہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ کا حکم کالعدم قرار دیا جائے۔ دوسری جانب وزارتِ داخلہ کی جانب سے سنتھیا رچی کو 15 روز کے اندر اندر پاکستان چھوڑنے کے احکامات جاری کر دیئے گئے ہیں۔ وزارتِ داخلہ نے امریکی شہری و بلاگر سنتھیا ڈی رچی کی ویزے میں توسیع کی درخواست مسترد کر دی۔ نجی نیوز کے مطابق امریکی شہری سنتھیا ڈی رچی کے ویزے کی مدت 31 اگست کو ختم ہوچکی ہے اور انہوں نے ویزے کی توسیع کے لیے درخواست دے رکھی تھی جسے آج وزارتِ داخلہ نے مسترد کر دیا۔ وزارت داخلہ نے سنتھیا رچی کو 15 دن کے اندر اندر پاکستان چھوڑنے کے احکامات جاری کیے ہیں۔ واضح رہے کہ سنتھیا ڈی رچی کی جانب سے پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنماؤں سابق وزیرِ اعظم یوسف رضا گیلانی، سابق وزیرِ داخلہ رحمٰن ملک اور مخدوم شہاب الدین پر سنگین نوعیت کے الزامات لگائے گئے تھے۔ سنتھیا رچی پی پی رہنماؤں پر لگائے گئے اپنے ان الزامات کو پولیس اور عدالت کے سامنے ثابت کرنے میں ناکام رہی تھیں۔ سابق وزیرِ داخلہ اور پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما رحمٰن ملک کی جانب سے اسلام آباد ہائی کورٹ میں اس سلسلے میں ایک درخواست دائر کی گئی تھی، انہوں نے سنتھیا رچی پر ہتک عزت کا دعویٰ بھی دائر کیا تھا۔ عدالتِ عالیہ کی جانب سے سیکریٹری داخلہ کو سنتھیا رچی کے ویزے میں توسیع کے معاملے پر فیصلہ کرنے کا حکم دیا گیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں