بریکنگ نیوز: کل کے ہیرو آج کے زیرو ۔۔۔!!! حکومت نے کتنے ہزار ڈاکٹرز ملازمت سے فارغ کردئیے؟ جان کر آپ کی آنکھیں پھٹی کی پھٹی رہ جائیں گی

کراچی(ویب ڈیسک )غیر حاضر رہنے والے ڈاکٹروں کو شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے محکمہ صحت سندھ نے ڈیڑھ ہزار سے زائد طبی ماہرین کو ملازمت سے فارغ کردیا۔تفصیلات کے مطابق سندھ حکومت نے یوم آزادی کے موقع پر غیر حاضر رہنے والے اور ڈیوٹی میں غلفت برتنے والے ڈاکٹرو کے خلاف کارروائی کا آغاز کردیا، محکمہ

صحت سندھ نے پاکستان سے باہر جانے والے 1200 ڈاکٹروں کو نوٹس جاری کردئیے۔محکمہ صحت سندھ کی جانب سے تمام ڈاکٹرز کو غیر حاضری پر شوکاز نوٹس بھی جاری کیے گئے تھے جبکہ قانونی کارروائی پوری کرتے ہوئے فائنل شوکاز بھی جاری کیا گیا۔سندھ حکومت نے ڈاکٹروں کے خلاف ایکشن لیتے ہوئے 1700 سے زائد ڈاکٹروں کو نوکری سے بھی فارغ کردیا گیا ہے جبکہ غیر حاضر ڈاکٹروں کی طلبی کےلیے قومی اخبارات میں اشتہار بھی جاری کیے گئے۔محکمہ صحت سندھ کا کہنا ہے کہ جواب نہ ملنے پر غیر حاضر ڈاکٹرز کو ملازمت سے فارغ کیا گیا۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وزیر تعلیم سندھ سعید غنی نے اپنے بیان میں کہا کہ ہمیں اپنی سوچ میں تبدیلی لاناہوگی، کسی کو ہم سے اختلاف ہوسکتا ہے مگرکراچی کی ترقی بربادنہ کریں، اگرکراچی تباہ ہوتاہےتواس شہرمیں رہنےوالاہرشخص تباہ ہوگا۔سعید غنی کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت میں کراچی کی ترقی کے لئےذرابھی بدنیتی نہیں، کراچی سندھ ریونیومیں 90 فیصددیتا ہے تو وفاق کوبھی 60 فیصد دیتا ہے، سندھ کو کہا جاتا ہے کہ 90 فیصد لگاؤ تو وفاق بھی 60 فیصد لگائے۔وزیر تعلیم سندھ نے مزید کہا کہ کراچی کیلئے ہم نے بہت کچھ کیا ہے اور کررہے ہیں، یہی بے حسی رہی تو ہمارا نقصان کم اورشہر کا زیادہ ہوگا۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی تاریخ کتابوں میں ہونی چاہئے، ہمیں بچوں کو حقائق پڑھانا ہوگی تاکہ انہیں معلوم ہو، بدقسمتی سے حقائق کے منافی بہت سی چیزیں کتابوں میں ہیں۔