برف پگھلنے لگی۔!! متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے مابین سفارتی تعلقات بحال، تل ابیب سے خرطوم تک نئی سروس کا آغاز کردیا گیا

خرطوم (ویب ڈیسک) عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان سفارتی تعلقات کے بعد برف پگھلنے لگی ، تل ابیب اور خرطوم کے درمیان پہلی براہ راست پرواز ،اطلاعات کے مطابق امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو آج منگل کی صبح اسرائیل سے سوڈان روانہ ہوئے۔ یہ تل ابیب اور خرطوم کے درمیان سرکاری طور پر پہلی براہ راست پرواز تھی۔

امریکی ذرائع ابلاغ کے مطابق پومپیو کا مشرق وسطی کے دورے کا آج دوسرا دن ہے۔ خرطوم میں کئی معاملات زیر بحث آئیں گے۔ ان میں سوڈان کا نام دہشت گردی کے سرپرست ممالک کی فہرست سے نکالنے کے عمل میں تیزی اور سوڈان میں امن کے لیے واشنگٹن کی سپورٹ شامل ہے۔ پومپیو نے اپنی ٹویٹ میں کہا کہ “مجھے اس اعلان پر مسرت ہو رہی ہے کہ ہم سرکاری طور پر اسرائیل سے براہ راست سوڈان جانے والی پہلی پرواز میں سوار ہیں”۔یاد رہے کہ سوڈان اور اسرائیل کے درمیان سفارتی تعلقات نہیں ہیں۔ سوڈان کے وزیر اعظم عبداللہ حمدوک نے پیر کی شام فریڈم اینڈ چینج پارٹی کی مرکزی مجلس کے ساتھ ایک اجلاس میں باور کرایا تھا کہ امریکا کے ساتھ متعدد امور کے حوالے سے بات چیت جاری رکھنے کی ضرورت و اہمیت ہے۔ ان امور میں مشترکہ تعلقات، دہشت گردی کے سرپرست ممالک کی فہرست سے سوڈان کا نام نکالا جانا اور سوڈان پر عائد پابندیوں کا ختم کیا جانا شامل ہے جس نے ملک کو بین الاقوامی استحقاق سے محروم کر رکھا ہے۔ ذرائع کے مطابق اس اہم اجلاس میں وزیر اطلاعات اور وزیر ثقافت نے بھی شرکت کی۔اسی طرح اجلاس میں ایک بار پھر یہ موقف دہرایا گیا کہ اسرائیل کے ساتھ معمول کے تعلقات استوار کرنا ، عبوری مدت کی حکومت کے لیے دل چسپی کے امور میں شامل نہیں۔ واضح رہے کہ توقع ہے کہ پومپیو سوڈان کے بعد امارات اور بحرین کا دورہ کریں گے۔ پومپیو نے اپنے مشرق وسطی کے حالیہ دورے کا آغاز پیر کے روز اسرائیل سے کیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں