کپتان کے وسیم اکرم پلس کے پول کھل گئے : کل فیاض چوہان وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو کیا حکم جاری کرتے پائے گئے ؟ سب کچھ کیمرے کی آنکھ نے ریکارڈ کر لیا، آپ بھی جانیے

لاہور(ویب ڈیسک)شجرکاری مہم کے آغاز پر سردار عثمان بزدار میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے کہ اسی دوران ایک صحافی نے ان سے نیب کے حوالے سے سوال پوچھا ۔ ابھی صحافی کا سوال مکمل بھی نہیں ہوا تھا کہ ان کے پہلو میں کھڑے وزیر اطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان نے آنکھ مسلنے

کا بہانہ کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ کے کان میں سرگوشی کی اور انہیں کہا ” نیب کے خلاف نہیں بولنا”فیاض الحسن چوہان نے تو اپنے تئیں وزیر اعلیٰ کے کان میں سرگوشی کی تھی لیکن ڈائس پر رکھے میڈیا کے مائکس میں یہ بات ریکارڈ ہوگئی اور اب ان کی یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوچکی ہے۔دوسری جانب ایک اور خبر کے مطابق ن لیگ کے سینئر رہنما رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ ایف اے ٹی ایف کی قانون سازی پر نواز شریف کو پوری طرح آگاہ رکھا تھا، نواز شریف نے ہمیں کہا تھا کہ آپ اپوزیشن کے ساتھ بیٹھ کر ترامیم پر غور کریں،دو بلوں کا اپوزیشن کی ترامیم کے ساتھ منظورہونا پاکستان کی ضرورت تھی، جے یو آئی ایف کو اعتماد میں لینے میں کوتاہی ہوئی مگر بدنیتی نہیں تھی، اے پی سی حکومت سے نجات کیلئے نتیجہ خیز فیصلے کرے گی، مریم نواز گیارہ اگست کو نیب کے سامنے پیش ہوں گی۔وہ نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگوکررہے تھے۔ ن لیگ کے سینئر رہنما رانا ثناء اللہ نے کہا کہ ایف اے ٹی ایف کی قانون سازی پر نواز شریف کو پوری طرح آگاہ رکھا تھا، حکومت کو چار بلوں میں سے نیب اور مالی بدعنوانی کے بلز واپس لینا پڑے،باقی دو بلوں کا اپوزیشن کی ترامیم کے ساتھ منظورہونا پاکستان کی ضرورت تھی، اس دوران نواز شریف سے مشاورت ہوتی رہی اور ان کی رہنمائی سے استفادہ کیاگیا، مولانا فضل الرحمٰن سے نواز شریف کی کیا بات ہوئی میں نہیں جانتا، نواز شریف نے ہمیں کہا تھا کہ آپ اپوزیشن کے ساتھ بیٹھ کر ترامیم پر غور کریں۔رانا ثناء اللہ کا کہنا تھا کہ جے یو آئی ایف کا شکوہ جائزہے یہاں ن لیگ اور پیپلز پارٹی کی طرف سے کوتاہی ہوئی، میوچل لیگل اسسٹنس کے بل پر جے یو آئی ایف کو اعتماد میں لیا تھا، بل میں پارلیمانی نگرانی کی ترمیم جے یو آئی نے پیش کی تھی۔