پہاڑوں کی سیر کو جانے والوں اور لے جانے والوں کے لیے خوشخبری ۔۔۔ سیاحت کے لیے شمالی عالقہ جات کو کب تک باقاعدہ کھول دیا جائے گا؟ اعلان کر دیا گیا

پشاور(ویب ڈیسک) وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے کہاہے کہ کورونا وائرس کی وجہ سے صوبے کو 53 ارب روپے کا نقصان پہنچا ہے، صورتحال قابو میں رہی تو ہفتہ دس دنوں میں سیاحت کو کھول دینگے۔سیدوشریف میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ محمود خان کاکہناتھا کہ سوات میں

جنگلات کی غیر قانونی کٹائی کسی صورت برداشت نہیں کی جائیگی اور امسال مزید ایک ارب درخت لگائے جائیں گے۔ان کاکہنا تھا کہ لا ک ڈاؤن کے حوالے سے وزیر اعظم عمران خان کی پالیسی بہت کامیا ب رہی ہے جس کے دور رس نتائج برآمد ہورہے ہیں ۔وزیر اعلیٰ کاکہناتھا کہ وفاقی حکومت سوات ایکسپریس وے کیلئے 19 ارب روپے دے رہی ہے جس پر بہت جلد کام شروع کردیا جائے گا جس سے یہاں کی سیاحت کے فروغ میں مددملے گی۔محمود خان کاکہناتھا کہ کورونا وائرس سے نمٹنے کے لئے رقم سالانہ ترقیاتی بجٹ سے فراہم کی گئی ہےجس سے ترقیاتی کاموں میں تاخیر پیدا ہوسکتی ہےْ جنگلات کی غیر قانونی کٹائی کسی صورت برداشت نہیں کی جائیگی اور امسال مزید ایک ارب درخت لگائے جائیں گے۔ان کاکہنا تھا کہ لا ک ڈاؤن کے حوالے سے وزیر اعظم عمران خان کی پالیسی بہت کامیا ب رہی ہے جس کے دور رس نتائج برآمد ہورہے ہیں ۔وزیر اعلیٰ کاکہناتھا کہ وفاقی حکومت سوات ایکسپریس وے کیلئے 19 ارب روپے دے رہی ہے جس پر بہت جلد کام شروع کردیا جائے گا جس سے یہاں کی سیاحت کے فروغ میں مددملے گی۔محمود خان کاکہناتھا کہ کورونا وائرس سے نمٹنے کے لئے رقم سالانہ ترقیاتی بجٹ سے فراہم کی گئی ہےجس سے ترقیاتی کاموں میں تاخیر پیدا ہوسکتی ہےْ جس سے یہاں کی سیاحت کے فروغ میں مددملے گی۔محمود خان کاکہناتھا کہ کورونا وائرس سے نمٹنے کے لئے رقم سالانہ ترقیاتی بجٹ سے فراہم کی گئی ہےجس سے ترقیاتی کاموں میں تاخیر پیدا ہوسکتی ہےْ