لندن سے براہِ راست پاکستان۔۔۔!! پاکستانیوں کے لیے بڑی خبر، وہ اعلان ہوگیا جس کا پاکستانی بے صبری سے انتظار کر رہے تھے

اسلام آباد( نیوز ڈیسک ) قومی ایئر لائن نے برطانیہ کیلئے فلائٹس بحال کرنے کا اعلان کر دیا۔پی آئی اے کے مطابق اس کے مسافر اب متبادل کے بجائے براہ راست پاکستان اور لندن، مانچسٹر اور برمنگھم کے درمیان سفر کر سکیں گے اس سلسلے میں تمام تیاریوں کو حتمی شکل دے دی گئی ہے۔

ترجمان کے مطابق قومی ایئر لائن نے برطانیہ کے مختلف شہروں سے سفر کرنے والے مسافروں کے لئے متبادل ذریعے سے پروازیں چلانے کا فیصلہ کیا ہے۔پی آئی اے نے اپنے مسافروں کو سہولیات فراہم کرنے کیلئے 14 اگست سے پروازیں چلانے کا فیصلہ کیا ہے۔ پی آئی اے کی پروازوں کی معطلی کے بعد دیگر ائیرلائنز نے کرائے غیر معمولی طور پر بڑھا دئیے تھے قومی ایئر لائن کی پروازوں کے چلنے کے بعد کرائے واپس اپنے مقام پر آنے کی توقع ہے۔پی آئی اے کے ترجمان کے مطابق عید کے فوراً بعد پروازوں کے اوقات کار سے متعلق اعلان کردیا جائے گا۔خیال رہے کہ یکم جولائی کو برطانیہ کی سول ایوی ایشن اتھارٹی نے اپنے 3 ایئرپورٹس سے پی آئی اے کی پروازوں پر پابندی لگانے کا اعلان کیا تھا۔برطانوی اتھارٹی کے ترجمان نے بتایا تھا کہ برمنگھم، لندن ہیتھرو اور مانچسٹر ایئرپورٹس سے پی آئی اے کی پروازیں فوری طور پر معطل کی جاتی ہیں۔برطانیہ کی جانب سے یہ اعلان یورپی یونین ایئر سیفٹی ایجنسی کے آئندہ 6 ماہ تک پی آئی اے کے آپریشن معطل کرنے کے فیصلے کے بعد کیا گیا تھا۔ پی آئی اے کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ اس کا اطلاق یکم جولائی 2020 کو رات12 بجے سے ہوگا اور کہا تھا کہ اس فیصلے کے خلاف اپیل دائر کی جاسکے گی۔قومی ایئرلائن کا کہنا تھا کہ ایاسا کے اس فیصلے کے نتیجے میں پی آئی اے یورپ کی تمام پروازیں عارضی مدت کے لیے منسوخ کررہا ہے۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ پی آئی اے یورپی یونین کی فضائی سیفٹی کے ادارے کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہے اور ان کے خدشات کو دور کرنے کے لیے اصلاحی اقدامات کررہا ہے۔