کس کو امدادی رقم ملے گی اور کس کو نہیں ؟ احساس ایمرجنسی کیش پروگرام میں رجسٹریشن کرانے والے افراد کیلیے اہم خبر

اسلام آباد (ویب ڈیسک) معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر کا کہنا ہے کہ وہ افراد جو 8171 پر امدادی رقم کیلئے اندراج کروا چکےہیں، وہ پورٹل پر شناختی کارڈ نمبر درج کر کے اہلیت معلوم کرسکتے ہیں۔تفصیلات کے مطابق احساس ایمرجنسی کیش پروگرام سے متعلق معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے اپنے ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ

عوام احساس پروگرام میں ویب پورٹل پراہلیت کی تصدیق کرسکتے ہیں، طریقہ کار جاننےکیلئےمعلوماتی ویڈیو جاری کر دی گئی ہے۔ڈاکٹر ثانیہ نشتر کا کہنا تھا کہ جو افراد 8171 پر امدادی رقم کیلئے اندراج کروا چکے ہیں، وہ ویب پورٹل پر شناختی کارڈ نمبر درج کر کے اہلیت معلوم کرسکتے ہیں۔یاد رہے معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا تھا کہ احساس ایمرجنسی کیش کا دائرہ بڑھایا جارہا ہے، پروگرام کو203ارب تک بڑھا رہے ہیں ، جس سے پاکستان کی آدھی آبادی پروگرام سے مستفید ہوسکے گی۔ڈاکٹر ثانیہ نشتر کا کہنا تھا کہ پروگرام کوعالمی سطح پربہت پذیرائی مل رہی ہے، سماجی بھلائی کا سب سےبڑا اور سب سے تیز پروگرام کیا، اس پروگرام میں وزیراعظم بھی ایک کیس ڈال اور نکال نہیں سکتے تھے۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق معاون خصوصی عثمان ڈار نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان 12اگست کو کامیاب جوان پروگرام کے دوسرے فیز کا افتتاح کریں گے، 10لاکھ پر 3فیصد مارک اپ بغیر کسی گارنٹی کے بزنس کرنے والوں کو دیں گے۔معاون خصوصی عثمان ڈار نے سرحد چیمبر آف کامرس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ 9 اگست ٹائیگرز فورس ڈے ہوگا، وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا سے اس سلسلے میں ملاقات ہوئی، 9اگست کو 5 لاکھ درخت خیبر پختونخوامیں نوجوان لگائیں گے۔عثمان ڈار کا کہنا تھا کہ 10لاکھ درختوں میں سے کے پی میں 5 لاکھ لگائے جائیں گے، نوجوانوں کی بہتری کے لئے کامیاب جوان پروگرام شروع کیا۔معاون خصوصی نے کہا کہ خیبر پختونخوا کے 90ہزارنوجوانوں سے اپلائی کیا ہے، 8 سے 10 ہزار جوانوں کو پہلے فیز میں رقم دیں گے ، کامیاب جوان پروگرام 18سے 45 سال کےافراد کے لئے ہےان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان 12اگست کو دوسرے فیز کا افتتاح کریں گے ، 10لاکھ پر 3فیصد مارک اپ بغیر کسی گارنٹی کے بزنس کرنے والوں کو دیں گے ، 10 لاکھ سے ایک کروڑتک 4 فیصد مارک اپ رقم دیں گے۔اپوزیشن کے حوالے سے عثمان ڈار نے مزید کہا اپوزیشن تو ہر چیز پر تنقید کرتی ہے، لاک ڈاؤن کرتےتوآج بھارت جیساحال ہوتا، اپوزیشن جومکمل لاک ڈاؤن کاکہتی تھی آج بھارت کاحل دیکھے۔ان کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے بھارت کی معیشت تباہ ہوئی ، سندھ حکومت نےمکمل لاک ڈاؤن کیا تھا، آج دنیا میں عمران خان کے فیصلوں کو سراہا جارہا ہے۔