نہ کوئی سرکاری عہدہ اور نہ ہی پاور۔۔۔ سی پیک پر کام کرنے والے ٹھیکیدار کس طرح عام عوام سے کروڑوں روپے لوٹ رہے ہیں؟ حیرت انگیز اکرپشن کا انکشاف

رحیم یار خان (ویب ڈیسک ) ظاہر پیر سی پیک انٹر چینج پر میگا کرپشن کا انکشاف، ٹھیکیدار مال بردار گاڑیوں اور مسافر بسوں کو روک کر پیسے وصول کر رہے ہیں، روزانہ 15 لاکھ روپے کی کرپشن کیے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔نجی ٹی وی کے مطابق صوبہ پنجاب کے ضلع رحیم یار خان

کے شہر ظاہر پیر میں سی پیک انٹر چینج پر میگا کرپشن کا انکشاف ہوا ہے، مذکورہ مقام پر اوور لوڈڈ گاڑیوں کو جانے سے روکنے کے لیے 17 وے سٹیشن بنا دیے گئے۔حکومت کی جانب سے ٹھیکیدار کو فی اے سٹیشن 4 لاکھ ادا کیے جا رہے ہیں تاہم ٹھیکیدار نے کانٹا سسٹم کو کمائی کا ذریعہ بنالیا۔ مال بردار گاڑیوں کے ساتھ مسافر بسوں کو بھی روکا جارہا ہے، 17 وے سٹیشز پر روزانہ 15 لاکھ کی کرپشن ہورہی ہے۔ٹرانسپورٹرز نے اپیل کی ہے کہ نیشنل ہائی وے اتھارٹی (این ایچ اے)نوٹس لے کر ٹھیکیدار کو بلیک لسٹ کرے۔