بغل میں چُھری اور منہ میں رام رام!!! وزیراعظم معاون خصوصی ’’ندیم بابر‘‘ خفیہ طور پر پیٹرولیم اداروں میں کیا کارروائی ڈالتے رہے؟ اہم انکشاف ہوگیا

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے پٹرولیم ندیم بابر کی پٹرولیم ڈویژن کے ذیلی اداروں میں ہی سرمایہ کاری کاانکشاف ہوا ہے ۔ ندیم بابر کے اثاثوں سے متعلق معلوم ہوا کہ انہوں نے تیل،گیس، پاورسیکٹر میں سرمایہ کاری کررکھی ہے ۔کابینہ ڈویژن کے مطابق ندیم بابر کی پی ایس او،

سوئی ناردرن، سوئی سدرن ، اوجی ڈی سی ایل اور پی پی ایل میں بھی سرمایہ کاری ہے ۔ کابینہ ڈویژن کی طرف سے جاری تفصیلات کے مطابق معاون خصوصی پیٹرولیم کی سوئی ناردرن، سوئی سدرن میں سرمایہ کاری ہے۔ ندیم بابر نے او جی ڈی سی، پی پی ایل میں بھی سرمایہ لگایا ہوا ہے۔ ندیم بابر پی ایس او میں اور او جی ڈی سی میں پانچ پانچ سو شئیرز کے مالک ہیں۔ انہوں نے سوئی ناردرن اور سدرن میں بھی شئیرز خرید رکھے ہیں۔ وہ اس کے علاوہ پی پی ایل میں بھی پانچ سو شئیرز کے مالک ہیں۔ معاون خصوصی ندیم بابر نے اورینٹ پاور، فونکس، این وائی ٹی انرجی میں سرمایہ کاری کر رکھی ہے۔ ان کا اورسن پاور، صبا پاور، فیوچر انرجی پارٹنرز میں کاروبار ہے۔ ان کا کا اورینٹ پاور کمپنی میں پچانوے کروڑ روپے جبکہ اورسن سولر پاور میں تیرہ کروڑ تیس لاکھ روپے کا کاروبار ہے۔ واضح رہے کہ ندیم بابر نے 2 ارب 75 کروڑ روپے سے زائد کے اثاثے ظاہر کئے ہیں اور امریکی شہریت بھی رکھتے ہیں۔ ندیم بابر کا پاکستان میں اور ملک سے باہر بھی کاروبار ہے۔ ندیم بابر پی ایس او میں اور او جی ڈی سی میں 500،500 شیئرز کے مالک ہیں۔ انہوں نے سوئی ناردرن اور سدرن میں بھی شیئرز خرید رکھے ہیں۔ وہ اس کے علاوہ پی پی ایل میں بھی 500 شیئرز کے مالک ہیں۔