کرونا وائرس تو کچھ بھی نہیں ، ایشیائی ملکوں میں کون سی خطرناک ،بیماری خاموشی کےساتھ تیزی سےپھیل رہی ہے؟7 دنوں میں 32ہزار سے زائد کیسز رپورٹ،خوفناک انکشاف‎

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک)چینی حکام نے ایک اور نامعلوم بیماری کے پھیلنے سے متعلق دنیا کو خبردار کر دیاہے جو کہ کورونا سے بھی زیادہ مہلک اور جان لیوا ہے ، مہلک بیماری سے شرح اموات کورونا سے بہت زیادہ،شہری احتیاط کریں ۔قومی موقر نامے میں شائع رپورٹ کے مطابق چینی عہدیداروں نے خبردار کیاہے کہ ایک مہلک ” نامعلوم نمونیہ “ ایشیائی ملک میں پھیل رہا ہے جس کی شرح اموات کورونا وائرس سے زیادہ ہے ۔ غیر ملکی ویب سائٹ کےمطابق ایشیائی ملک ” قازقستان “ کے متعدد علاقوں میں جون کے وسط سے اس بیماری سے متاثرہ افراد کی تعداد

میں بڑے پیمانے پر اضافہ دیکھنے میں آیا ہے ۔ملک کی وزارت صحت نے بیان جاری کرتے ہوئے بتایا کہ 29 جون سے 5 جولائی کے درمیان نمونیا کی پہلے سے معلوم قسم کے 32 ہزار سے زیادہ کیسزریکارڈ ہوئے ہیں جن میں 451اموات ہوئی ہیں ۔قازقستان میں قائم چینی سفارت خانے نے کہا ہے کہ سال کے پہلے نصف میں ملک میں 1772 اموات سامنے آئی ہیں جن میں سے کچھ چینی شہری تھے ۔