بریکنگ نیوز:متحدہ عرب امارات جانے کے خواہشمند پاکستانیوں کو زبردست خوشخبری سنا دی گئی

لاہور (ویب ڈیسک) متحدہ عرب امارات (یو اے ای) کیلئے پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائنز (پی آئی اے) کے فضائی آپریشن کی بحالی کے بعد پاکستان سے دبئی، شارجہ، ابوظہبی اور العین کیلئے پروازیں روانہ ہو رہی ہیں۔تفصیلات کے مطابق پی آئی اے کے ترجمان کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ دبئی حکام

کی ہدایات کے مطابق تمام مسافروں کو پرواز کی روانگی کے 96 گھنٹوں کے اندر مختص کردہ لیبارٹری سے کورونا ٹیسٹ کروانا لازم ہو گا اور منفی رپورٹ بورڈنگ کے وقت پیش کرنا ہوگی۔مسافروں کو دبئی اتھارٹی کی جانب سے سفر کیلئے کلیئرنس سرٹیفیکٹ کا حصول بھی لازم ہے جبکہ مسافر مطلوبہ اجازت نامہ آن لائن اپلائی کر کے حاصل کر سکتے ہیں، اس کے علاوہ متحدہ عرب امارات پہنچنے سے پہلے ہیلتھ ڈیکلریشن فارم بھی پر کرنا لازم ہے۔ ٹکٹوں کی فروخت کا آغاز بھی کیا جا چکا ہے جو کہ پی آئی اے کے دفاتر کے علاوہ ویب سائٹ اور ایجنٹس سے بھی خریدے جا سکتے ہیں۔واضح رہے کہ 28 جون کو متحدہ عرب امارات انتظامیہ نے پاکستان سے آنے والے مسافروں پر یہ کہہ کر عارضی پابندی لگائی تھی کہ جب تک کورونا ٹیسٹنگ کیلئے لیبارٹری نہیں بن جاتی تب تک پاکستان سے مسافر متحدہ عرب امارات سفر نہیں کر سکیں گے۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق پی آئی اے طیارہ حادثہ میں مسافروں کے سامان کی واپسی کا آغاز کردیا گیا ہے، سامان کی واپسی کے لئے بین القوامی انشورنس ٹیم کی سرپرستی میں شناخت کا عمل جاری ہے جس کے تحت پی ائی اے نے جاں بحق مسافروں کی قیمتی اشیا اور دیگر سامان لواحقین کے حوالے کررہی ہے۔ترجمان قومی ایئر لائن نے نمائندہ اے آر وائی نیوز کو بتایا کہ سامان کی شناخت کا عمل 3 دن جاری رہے گا جس کے بعد سامان ورثاء کے حوالے کیا جائے گا۔ترجمان پی آئی اے عبداللہ خان کا کہنا تھا کہ پی آئی اے کے سنئر افسران 11 سے 13 جولائی تک ٹریننگ سینٹر میں موجود ہوں گے، سامان کی حوالگی بین القوامی مروجہ اصولوں کے مطابق کی جارہی ہے۔ترجمان کا کہنا تھا کہ پہلے دن 65 فیملیز نے دورہ کیا جس میں 115 افراد شامل تھے، سامان لواحقین کو اصل شناختی کارڈ اور ضروری کاروائی مکمل کر کے حوالے کیا جائے گا۔یاد رہے کہ 22 مئی جمعۃ الوداع کو لاہور سے کراچی آنے والا پی آئی اے کا طیارہ ایئرپورٹ کے قریب واقع ماڈل کالونی جناح گارڈن کی رہائشی آبادی پر گر کر تباہ ہوگیا تھا جس کے نتیجے میں 97 مسافر ہلاک جبکہ 2 مسافر معجزانہ طور پر بچ گئے تھے۔ حادثے میں مقامی لوگوں کی ہلاکتیں بھی ہوئیں جبکہ پانچ گھر مکمل تباہ ہوگئے۔