پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنماء کو خاندان والوں نے ’ عاق ‘ کر دیا، اخبار میں باقاعدہ اشتہار بھی دے دیا

لودھراں(نیوز ڈیسک ) ضلع لودھراں سے تعلق رکھنے والے پی ٹی آئی کے جنرل سیکرٹری رانا محمد ارسلان کو انکے والد نے اپنی جائیداد سے عاق کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ محمد ارسلان کے کسی قول و فعل کے ذمہ دار نہیں ہونگے اور نہ ہی ان سے انکا کوئی تعلق ہے۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک

انصاف لودھراں کے محمد ارسلان کی جانب سے مقامی اخبار میں ایک اشتہار چھپوایا گیا ہے۔ جس میں رانا شبیر احمد ولد رانا عبدالعزیز خان قوم راجپوت نے کہا کہ ’’ وہ اپنے حقیقی بیٹے رانا محمد ارسلان جو کہ جنرل سیکرٹری پاکستان تحریک انصاف ضلع لودھراں ہے کو بوجہ نافرمانی، گستاخی اور غلط چال چلن اپنی تمام منقولہ و غیر منقولہ جائیداد سے عاق کرتا ہوں آئندہ میں اور میری باقی تمام اولاد محمد ارسلان کے کسی قول و فعل کے ذمہ دار نہ ہوں گے اور نہ ہی محمد ارسلان ہمارے گھروں میں داخل ہونے کی کوشش کرے‘‘۔اخبار میں دیئے گئے اشتہار کا تراشہ :دوسری جانب کراچی سے پی ٹی آئی سے تعلق رکھنے والے اشرف علی نے پیپلز پارٹی میں شمولیت اختیار کر لی ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ اشرف علی پارٹی کی اعلیٰ قیادت کے نامناسب رویے کی وجہ سے پارٹی سے نالاں تھے۔تفصیلات کے مطابق شہر قائد میں تحریک انصاف کو نازک وقت میں جھٹکا لگا ہے، رہنماء تحریک انصاف اشرف علی پیپلز پاارٹی میں شامل ہوگئے ہیں۔ اشرف علی کی صوبائی وزیر صحت سعید غنی سے ملاقات ہوئی، ملاقات میں آئندہ کے لائحہ عمل اور صوبے میں تحریک انصاف کی ناکامیوں سے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا ۔ اس موقع پر اشرف علی کی جانب سے باقاعدہ طور پر پاکستان پیپلز پارٹی میں شمولیت کا اعلان کیا گیا۔ اس موقع پر سعید غنی کا کہنا تھا کہ سندھ کے مختلف اضلاع سے لوگ دھڑا دھڑ پیپلز پارٹی میں شامل ہو رہے ہیں، جسکی وجہ تحریک انصاف کی ناکس پالیسیاں اور پارٹی ورکروں کو اگنور کرنا ہے۔ اس موقع پر اشر ف علی کا کہنا تھا کہ ہم جس جذبے کے ساتھ تحریک انصاف کے لیے کام کر رہے تھے اس کی قد نہیں کی گئی، غیر منتخب لوگوں کو آگے لا کر تحریک انصاف کی قیادت نے یہ ثابت کر دیا کہ اُنہیں نظریاتی رہنماؤں اور کارکنوں کی ضرورت نہیں ہے، پارٹی کے لیے گراں قدر خدمات سر انجام دیں لیکن اسکا صلہ نہیں مل سکا اس لیے تحریک انصاف کو چھوڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اشرف علی کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کراچی سمیت پورے سندھ کے لیے کام کر رہی اور سندھ کی عوام کی خدمت میں مصروف ہے، پیپلز پارٹی کی قیادت نے جمہوریت کے لیے بے شمار قربانیاں دی اور ابھی بھی جمہوریت کی سر بلندی کے لیے کام کر رہی ہے، اس لیے پیپلز پارٹی میں شامل ہونے کا فیصلہ کیا تا کہ ملک و قوم کی خدمت بہتر انداز میں کی جا سکے۔